’میں چیک اپ کروانے ہسپتال گئی تھی، وہ پاکستانی ڈاکٹر آیا اور میرے جسم کے اس حصے پر ہاتھ رکھ کر کہنے لگا کہ۔۔۔‘ پاکستانی ڈاکٹر کی نوجوان برطانوی لڑکی کے ساتھ انتہائی شرمناک ترین حرکت، اب نوکری بھی جائے گی اور۔۔۔

’میں چیک اپ کروانے ہسپتال گئی تھی، وہ پاکستانی ڈاکٹر آیا اور میرے جسم کے اس ...
’میں چیک اپ کروانے ہسپتال گئی تھی، وہ پاکستانی ڈاکٹر آیا اور میرے جسم کے اس حصے پر ہاتھ رکھ کر کہنے لگا کہ۔۔۔‘ پاکستانی ڈاکٹر کی نوجوان برطانوی لڑکی کے ساتھ انتہائی شرمناک ترین حرکت، اب نوکری بھی جائے گی اور۔۔۔

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک لڑکی چھاتی کے درد کے باعث ہسپتال لائی گئی جہاں ایک پاکستانی نژاد نے اس کے ساتھ ایسی شرمناک حرکت کر دی کہ اب نوکری بھی جائے گی اور برطانیہ سے بھی نکال دیا جائے گا۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 28سالہ لڑکی کی چھاتی میں درد ہوا جس پر اسے ہسپتال کے اے اینڈ ای یونٹ میں منتقل کیا گیا جہاں 35سالہ پاکستانی نژاد سید بخاری نامی ڈاکٹر ڈیوٹی پر تھا۔ اس بدطینت شخص نے ہاتھ اس کی شرٹ کے نیچے ڈال دیئے اور اس کی چھاتی کو چھونا شروع کر دیا اور جسم کے دیگر پوشیدہ حصوں کو بھی چھوتا رہا۔ اس بدقماش نے دو دن میں لڑکی کے ساتھ دو بار یہ گھٹیا حرکت کی۔

’ذرا دھیان سے رہو کہیں ایسا نہ ہو کہ۔۔۔‘ چین نے بھارت کو وارننگ دے دی، کیا کہا؟ جان کر مودی کو پسینے آجائیں گے

رپورٹ کے مطابق سید بخاری نے لڑکی کو دوستی کی پیشکش بھی کی اور کہا کہ ہم ہمیشہ دوست رہیں گے۔ تاہم لڑکی نے اس کی شکایت کر دی اوراب اس کے خلاف جنرل میڈیکل کونسل کے ٹربیونل میں مقدمہ چل رہا ہے۔ لڑکی نے ٹربیونل میں بتایا کہ یہ ڈاکٹر جب بھی راﺅنڈ پر آتا بہانے سے مجھے چھیڑنا شروع کر دیتا جس پر مجھے بہت شرمندگی ہوتی تھی۔ ملزم نے ابتدا ءمیں اپنے جرم سے انکار کیا تاہم بعد ازاں جرم ثابت ہونے پر اسے بھی اعتراف کر لیا۔ کیس کا فیصلہ تاحال سنایا جانا باقی ہے جس میں ممکنہ طور پر اسے نوکری سے نکال کر ملک بدر کرنے کی سزادی جا سکتی ہے۔

مزید : برطانیہ