چین آسیان ممالک کیساتھ آئندہ برس مشترکہ بحری مشقیں کرے گا

چین آسیان ممالک کیساتھ آئندہ برس مشترکہ بحری مشقیں کرے گا
چین آسیان ممالک کیساتھ آئندہ برس مشترکہ بحری مشقیں کرے گا

  

سنگاپور(آئی این پی )چین آسیان ممالک کیساتھ آئندہ برس مشترکہ بحری مشقیں کرے گا ، ان مشقوں کا مقصد محض چین کا آسیان ممالک سے بہتر، مضبوط تعلقات استوار کرنا ہے ۔

اعلیٰ ترین سطح پر ججز اور جے آئی ٹی کو متنازعہ بنانے کی کوششیں شرمناک ہیں:فوادچودھری

غیر ملکی خبررساں ادارہ کے مطابق چینی پیپلزلبریشن آرمی کے سینئر کولونئیل ژوہوبو نے گزشتہ روز میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ ان مشترکہ بحری مشقوں کا مقصد صرف آسیان ممالک سے بالخصوص جنوبی بحیرہ چین کے متنازعہ سے متعلقہ ممالک سے بہتر مضبوط تعلقات استوار کرنا ہے جبکہ مشرقی اور جنوبی بحیرہ چین کی اس وقت صورتحال تسلی بخش ہے ۔انہوں نے کہا کہ جنوبی بحیرہ چین کے تنازعہ سے متعلقہ ممالک کو مل بیٹھ کر بہتر طریقہ سے مستقل حل تلاش کرنا چاہیے اور اس حل میں بین الاقوامی قوانین کو مدنظر رکھا جائے ۔جنوبی بحیرہ چین سے تقریباً سالانہ ایک لاکھ بحری جہاز سازوسامان کی نقل وحرکت کیلئے گزرتے ہیں اور کبھی ان جہازوں میں سے کسی نے شکایت کی کہ ہمیں بلاوجہ روکا گیا ، تنگ کیا گیا ، اگرجنوبی بحیرہ چین کا متنازعہ کا پائیدار حل نہیں نکل پاتا تو اس ذرائع نقل وحمل کے متاثر ہونے کا بھرپور خدشہ ہے ۔ چین تمام آسایان مملک کے ساتھ بہتر اور مضبوط تعلقات چاہتاہے اور امن تنازعہ کا حل بھی دوستانہ ماحول میں مل بیٹھ کر پرامن طور پر ہی نکالا جا سکتا ہے ۔

مزید : بین الاقوامی