حکومت کی ایسی کیا مجبوری عوام پر پٹرول بم گرا دیا گیا، شیری رحمان

حکومت کی ایسی کیا مجبوری عوام پر پٹرول بم گرا دیا گیا، شیری رحمان

  



کراچی (این این آئی) پیپلزپارٹی کی سینئررہنما سینیٹر شیریں رحمان نے کہا ہے حکومت کی کیا ایسی مجبوری ہے کہ عوام پر پٹرول بم گرا دیا گیا،ناکام حکومت نے 9 ماہ میں پٹرولیم مصنوعات میں 20 فیصد اضافہ کر کے غریب عوام کی کمر توڑ دی ہے یہ کیسا خوفناک آئی ایم ایف پروگرام ہے جس کے آنے سے پہلے ہی شراط پر عمل ہونا شروع ہوگیا ہے۔ اپنے ایک بیان میں شیری رحمن کا کہنا ہے کہ ایک طرف عالمی منڈی میں تیل کی قیمتیں گر رہی ہیں تو دوسری طرف پاکستان میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں دن بدن اضافہ ہو رہا ہے، حکومت آئے دن عوام کے مسائل اور محرومیاں بڑھا رہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ پچھلی حکومتوں نے عوام کو رمضان کے مہینے میں ریلیف دیا،موجودہ حکومت نے رمضان کے پہلے دن 12 فیصد جی ایس ٹی لگایا، حکومت کے دس ماہ گزر گئے،ایک وعدہ بھی پورا نہیں ہوا، تین سے چار مرتبہ پیٹرولیم کی قیمتیں بڑھائیں، ہمارے وزیراعظم نے کہااگر ہم آئی ایم ایف کے پاس گئے تو خودکشی کر لوں گا،ہمیں انتظار ہے وزیراعظم اپنی کابینہ سمیت کب خودکشی کریں گے انہوں نے کہاکہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھانے سے پہلے گیس اور ادویات کی قیمتیں بڑھائی گئیں ریاست مدینہ کی بات کرنے والوں نے 9 مہینوں میں ریکارڈ مہنگائی کی یہ سب آئی ایم ایف کے کہنے پر کیا جا رہا ہے۔

شیری رحمان

مزید : صفحہ آخر


loading...