وزیر اعظم کے حکم پر زرتاج گل نے ہمشیرہ کی نیکٹامیں تعیناتی کیلئے لکھا خط واپس لے لیا 

وزیر اعظم کے حکم پر زرتاج گل نے ہمشیرہ کی نیکٹامیں تعیناتی کیلئے لکھا خط ...

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیراعظم کے اظہار ناراضگی اور حکم کے بعد وزیر مملکت زرتاج گل نے اپنی بہن شبنم گل کی نیکٹا میں تعیناتی کیلئے لکھا گیا خط واپس لے لیا۔خط میں زرتاج گل نے معاملے کی تحقیقات کی بھی درخواست کر دی ہے۔ مراسلے میں کہا گیا ہے کہ خط کامقصد اقربا پروری نہیں تھا۔تفصیلات کے مطابق وزیر مملکت موسمیاتی تبدیلی زرتاج گل کی ہمشیرہ شبنم گل کی نیکٹا میں تعیناتی کے معاملے پر وزیراعظم کے اظہار ناراضی اور ہدایات کے بعد 27 فروری 2019ء کو لکھا گیا خط واپس لے لیا گیا ہے۔واضح رہے اس سے قبل وزیراعظم عمران خان نے وزیر مملکت برائے ماحولیات زرتاج گل کو اپنی بہن کی تقرری کیلئے نیکٹا کو لکھا گیا خط واپس لینے کا حکم دیا تھا۔وزیراعظم کے معاون خصوصی نعیم الحق کی جانب سے سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے وزیر مملکت برائے ماحولیات زرتاج گل کو اپنی بہن کی تقرری کیلئے نیکٹا کو لکھا گیا خط واپس لینے کا حکم دیا ہے۔نعیم الحق کا کہنا تھا کہ سفارش پر تقرریاں پی ٹی آئی کی روایات کے خلاف ہیں، پی ٹی آئی حکومت میں کوئی شخص اپنے عزیز و اقارب کو فائدہ نہیں پہنچا سکتا، تحریک انصاف نے ہمیشہ اقربا پروری کی مخالفت کی لہٰذا حکومتی شخصیات عہدوں کا فائدہ اٹھا کر رشتہ داروں کو نواز نہیں سکتیں۔دوسری طرف نیشنل کاؤنٹرٹیررزم اتھارٹی کے سربراہ نے وزیر مملکت برائے موسمیاتی تبدیلی زرتاج گل کی اسسٹنٹ پروفیسر بہن شبنم گل کی تقرری کو میرٹ کے مطابق قرار دے دیا ہے۔سربراہ نیکٹا نے شبنم گل کی نیکٹا میں تعیناتی سے متعلق خبروں کی وضاحت میں کہا کہ نیکٹا میں گریڈ 17 سے گریڈ 19 تک ڈیپوٹیشن پر تعیناتی کیلئے مختلف وفاقی اور صوبائی محکموں سے 12 درخواستیں ملیں، 4 رکنی کمیٹی نے12 امیدواروں میں سے شبنم گل سمیت 6 امیدواروں کی تعیناتی کی منظوری دی۔ تاحال شبنم گل کی نیکٹا میں تقرری نہیں ہوئی ہے، شبنم گل کی تقرری 19 ویں گریڈ میں ڈیپوٹیشن پر اسٹیبلشمنٹ کے ذریعے مانگی گئی ہے، ان کی خدمات ادارے میں دہشت گردی کے حوالے سے تحقیقی نوعیت کی ہوگی۔نیکٹا کے سربراہ نے مزید کہا کہ میڈیا رپورٹس میں شبنم گل کی تقرری کو میرٹ کے برعکس کہا گیا ہے، یہ رپورٹس بے بنیاد ہیں، شبنم گل کی خدمات مکمل طور پر میرٹ پر مانگی گئی ہیں۔

زرتاج گل،خط واپس 

مزید : صفحہ اول


loading...