حضرت شاہ شمس ؒ کی تعلیمات ہمارے لیے مشعل راہ ‘ سید فخرامام

    حضرت شاہ شمس ؒ کی تعلیمات ہمارے لیے مشعل راہ ‘ سید فخرامام

  



ملتان ( سٹی رپورٹر)چیئرمین کشمیر کمیٹی ، سابق سپیکر قومی اسمبلی ایم این اے سید فخر امام شاہ نے کہا ہے کہ پاکستان اللہ تعالیٰ کا انعام اور مسلمانان برصغیر کیلئے تحفہ ہے جو ہمیں مبارک ماہ رمضان کی 27 ویں کو اولیاءاللہ اور صوفیائے کرام کے طفیل ملا کیونکہ برصغیر پاک و ہند میں صرف غیر معلم آباد تھے جہاں پر حضرت شاہ شمس ؒ سبزواری جیسے بزرگ اولیائے کرام نے تشریف لا کر دین اسلام کی ترویج فرمائی(بقیہ نمبر48صفحہ7پر )

 اور لاکھوں غیر مسلموں کو کلمہ حق پڑھا کر مسلمان کیا حضرت شاہ شمس ؒ سبزواری کی تعلیمات ہمارے لیے مشعل راہ ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے عظیم روحانی پیشوا صوفی بزرگ حضرت شاہ شمس ؒ کے 766 ویں عرس مبارک کے سلسلہ میں دربار شریف پر چادر پوشی اور دُعا کے موقع پر کیا اس موقع پر معاون موجود الوقت سجادہ نشین دربار عالیہ حضرت شاہ شمس تبریزی ؒ مخدوم سید طارق عباس شمسی، مخدوم سید ظفر عباس شمسی، مخدوم سید علی مہدی شمسی اور نعیم اقبال نعیم سماجی رہنما بھی ان کے ہمراہ موجود تھے ، سید فخر امام نے اس موقع پر مزید کہا کہ حضرت شاہ شمس ؒ نے بھلائی کا عام کیا اور امن، محبت و بھائی چارے کو فروغ دیا ان کی تعلیمات پر عمل پیرا ہو کر ہم اپنے بے پناہ مسائل حل کر سکتے ہیں اور دنیا و آخرت میں کامیاب ہو سکتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان اس وقت مشکل حالات سے دو چار ہے مشکل کی اس گھڑی میں پوری قوم کو حکومت کے ساتھ مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے ہمیں مشکل فیصلے کرنے ہونگے دیانتداری اور ایمانداری کو اپنا شعار بنانا ہو گا جو لوگ ٹیکس ادا نہیں کرتے وہ ملک و قوم کے بہتر مستقبل کیلئے اپنے وطن سے محبت کا اظہار کرتے ہوئے ٹیکس ادا کریں اور ملکی معیشت کو مضبوط کرنے میں اپنا کلیدی کردار ادا کریں اس موقع پر مخدوم سید طارق عباس شمسی نے پاکستان کی سالمیت و استحکام، خوشحالی اور تعمیر و ترقی کیلئے خصوصی دُعا فرمائی اور کہا کہ حضرت شاہ شمس ؒ اللہ کے سچے ولی تھے جن کا فیض آج بھی جاری ہے اس لیے پورا سال اور خاص کر عرس کے موقع پر اندرون و بیرون ملک سے زائرین کی کثیر تعداد حاضری کیلئے آتے ہے رمضان المبارک کی وجہ سے عرس کی تقریبات کو سادہ اور دو روزہ کر دیا گیا تھا ان شاءاللہ رمضان گزرنے کے بعد پھر سے تین روزہ تقریبات شایان شان انداز میں منعقد کی جائیں گی۔

فخرامام

مزید : ملتان صفحہ آخر