نشتر کارینہ ،پیوندکاری 74سے زائد مریضوں کی دنیا روشن

نشتر کارینہ ،پیوندکاری 74سے زائد مریضوں کی دنیا روشن

  



ملتان(خبرنگار خصوصی)نشتر ہسپتال کے شعبہ امراض چشم میں ایک سال کے دوران کارنیہ کی پیوندکاری کے ذریعے 74 سے زائد مریضوں کی جاتی ہوئی بینائی لوٹا دی گئی،اندھے پن کے شکار مریض بینائی واپس لوٹنے پر خوشی سے نہال،شعبہ امراض چشم کی جانب سے لاکھوں روپئے کا علاج مریضوں کو(بقیہ نمبر32صفحہ12پر )

 مفت میں فراہم کیا جا رہا ہے،شعبہ امراض چشم کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹر راشد قمر راو کہتے ہیں جنوبی پنجاب میں آنکھوں کے امراض میں مبتلا مریضوں کو لاہور کراچی نہیں جانا پڑیگا،،تفصیل کے مطابق نشتر ہسپتال کے شعبہ امراض چشم میں گزشتہ ڈیڑھ سال کے دوران انقلابی اقدامات اٹھائے گئے ہیں،وارڈ کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹر را شد قمر راو نے چارج سنبھالنے کے بعد سے پہلے شعبہ میں کارنیہ کی پیوندکاری کا عمل شروع کیا،جنوبی پنجاب میں پہلی بار نشتر ہسپتال میں شروع کئے جانے والے اس مہنگے اور پیچیدہ طریقہ علاج کو جاری رکھنے کے لئے امریکن تنظیم کی جانب سے مدد کی گئی جو کہ کارنیہ کا عطیہ کرتی ہے،ایک سیشن کے دوران پانچ کارنیہ منگوائے جاتے ہیں جس کی پیوندکاری کے بعد باقاعدہ مریض کا فالو اپ رکھا جاتا ہے،کارنیہ کی پیوندکاری کے ذریعے ایک سال کے دوران 15 سیشن کر کے 74 سے زائد غریب مریضوں کی بینائی واپس لوٹائی جا چکی ہے،جن میں ایک بزرگ مریضہ بھی شامل تھیں جنہوں نے 28 برس بعد بینائی واپس آنے پر اپنے بیٹے کو دیکھا،اس حوالے سے وارڈ کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹر راشد قمر راو نے بتایا کہ کارنیہ کی پیوندکاری نشتر ہسپتال میں باالکل مفت فراہم کی جا رہی ہے،اس کا مقصد غریب مریضوں کو اندھے پن سے بچانا ہے،کارخیر میں امریکن تنظیم کا تعاون حاصل ہے،تاہم اب ملتان اور گردونواح کے مخیر افراد کے تعاون سے جلد نشتر ہسپتال میں اپنا آئی بنک بنانے کا خواب ہے جس کو تکمیل تک پہنچاننے کے لئے کوشش شروع کر دی ہے اور نشتر ٹو میں آئی بنک کا قیام لازمی عمل میں لایا جائے گا۔

آپریشن ‘ بینائی

مزید : ملتان صفحہ آخر