بجلی چوری ،رانا قاسم کیس میں وزیراعظم کی انٹری ،میرٹ پر کاروائی کا حکم

  بجلی چوری ،رانا قاسم کیس میں وزیراعظم کی انٹری ،میرٹ پر کاروائی کا حکم

  



ملتان ( سٹاف رپورٹر) ایم این اے رانا قاسم نون بجلی چوری کیس کا معاملہ وزیر اعظم عمران خان تک پہنچ گیا۔ وزیر اعظم نے انصاف کے تقاضے پورے کرنے کی ہدایت کر دی۔ بتایا گیا ہے کہ میپکو شجاع آباد کی ٹیم نے روٹین کی چیکنگ کے دوران ایم این اے رانا قاسم نون کے ڈیرے پر بڑے (بقیہ نمبر55صفحہ7پر )

پیمانے پر بجلی چوری پکڑ لی تھی ۔اس پر ایس ڈی او کے مراسلے پر پولیس نے مقدمہ درج نہیں کیا اور میپکو ٹیم کو جھٹلانے کی کوشش کی مگر میپکو ٹیم نے ویڈیو ثبوت پیش کر دئیے ۔ اس پر معاملہ دوسری طرف لے جا کر ایم این اے قاسم نون کی بجائے ان کے منشی پر ملبہ ڈال کر کیس کا رخ تبدیل کرنے کی کوشش کی گئی۔ایم این اے رانا قاسم نون نے قومی اسمبلی میں تحریک استحقاق پیش کر دی ۔ قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی نے میپکو حکام کو طلب کرکے ایم این اے رانا قاسم نون کے خلاف بجلی چوری کی کارروائی ختم کرنے اور ان سے معافی مانگنے اور چھاپہ مار ٹیم کے ساتھ ایس ڈی او اور ایکسین شجاع آباد کو معطل کرنے کے لئے کہا ۔ میپکو حکام کے انکار پر چھاپہ مار ٹیم‘ ایس ڈی او ‘ ایکسین ‘ ایس ای ‘ چیف ایگزیکٹو آفیسر کو معطل کرنے کی سفارش کر دی ۔ اس پر سیکرٹری پاور ڈویژن بھی ڈٹ گئے کیونکہ حقائق ان کے سامنے تھے ۔ ذرائع کے مطابق ایم این اے رانا قاسم نون بجلی چوری کیس میڈیا میں آنے اور یہ بات جنگل کی آگ کی طرح پھیلنے پر معاملہ وزیر اعظم عمران خان تک پہنچ گیا۔وزیر اعظم عمران خان کو بتایا گیا کہ پی ٹی آئی کے رکن قومی اسمبلی کے بجلی چوری کیس میںکارروائی نہ ہونے پر حکومت کی بدنامی ہو رہی ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب سے صورتحال دریافت کی اور کہا کہ کچھ بھی ہو‘ انصاف کے تقاضے پورے کئے جائیں اور اگر پرچہ بنتا ہے تو وہ بھی کرایاجائے۔ذرائع نے مزید بتایا کہ اس کیس کے بارے میں خفیہ ایجنسیوں کی طرف سے رپورٹس بھی وزیر اعظم عمران خان کو پیش کی گئیں جس پر انہوں نے میرٹ پر اس کیس میں کارروائی کا حکم دےد یا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...