ملتان :2افراد قتل ،مظفر گڑھ وہاڑی اور دیگر شہریوں میں حادثے ،13جاں بحق

ملتان :2افراد قتل ،مظفر گڑھ وہاڑی اور دیگر شہریوں میں حادثے ،13جاں بحق

  



ملتان ‘ وہاڑی ‘ رحیمیار خان ‘ کبیروالا ‘ مظفر گڑھ ‘ روجھان ‘ بورے والا ‘ خانیوال ‘ خانپور بگا شیر ( خبر نگار خصوصی ‘ بیورو رپورٹ ‘ بیورو نیوز ‘ نمائندگان پاکستان ) ملتان میں معمولی جھگڑے پر دو افراد قتل کر دئے گئے جبکہ روجھان میں شوہر نے بیوی کو ابدی نیند سلا دیا ‘ مظفر گڑھ ‘ وہاڑی اور دیگر شہروں میں حادثات اور مختلف واقعات کے دوران 13 افراد جاں بحق ہوگئے ۔ پاکپتن روڈ مانا موڑ کے قریب تیز رفتار بس موٹر سائیکل رکشہ کو بچاتے ہوئے الٹ گئی حادثہ کے(بقیہ نمبر18صفحہ12پر )

 نتیجہ میں دو افراد جا ںبحق ہوگئے ‘ واقعات کے مطابق پاکپتن روڈ مانا موڑ کے قریب لاہور سے میلسی جانیوالی لوکل کمپنی کی تیز رفتار مسافر بس موٹر سائیکل رکشہ کو بچاتے ہوئے الٹ گئی حادثہ کے نتیجہ میں دو افراد موقع پر ہی جانبحق جبکہ تیس سے زائد افراد زخمی ہو گئے زخمیوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں معمولی زخمیوں کو موقع پر ابتدائی طبی امداد کے بعد فارغ کردیا گیا حادثہ کی اطلاع ملتے ہی ریسکیو 1122 نے موقع پر پہنچ کر جاں بحق اور 18 شدید زخمی افراد کو تحصیل ہسپتال سمیت گنج شکر ویلفیئر ہسپتال میں منتقل کیا گیا جہاں اکثر زخمیوں کی حالت تشویش ناک بتائی جا رہی ہے حادثہ میں لودھراں کا رہائشی 20عامر سہیل ولد محمد اقبال اور احمد نواز جاں بحق جبکہ کہروڑ پکا سے خالد ولد فدا،،کوٹ صدیق دنیا پور سے قیصر عباس ولد محمد حنیف،میلسی سے اشرف ولد لال دین،دوکوٹہ سے فاطمہ زوجہ محمد یار،دنیا پور سے خالق ولد رحیم بخش،رفیق ولد فرید،میلسی سے عمر فاروق ولد عبدالرحیم،محمد منیر ولد عبدالستار،وہاڑی سے محمد آصف گلزار ولد گلزار،دنیا پور سے ظہیر عباس ولد محمد اقبال،منیر ولد نور نبی ڈلن بنگلہ،محمد نواز ولد شاہ رسول،گڑھا موڑ سے قربان ولد افتخار،لودھراں سے غلام فرید ولد اللہ وسایا ،بوریوالا سے فخر ولد نایاب،دنیا پور سے غلام مرتضی ولد عبدالرحمان،فلک شیر ولد اصغر علی اور میلسی سے احمد رضا ولد رب نواز شدید زخمی ہوگئے واقعہ کی اطلاع ملتے ہی ڈی ایس پی بوریوالا اور اسسٹنٹ کمشنر ہسپتال پہنچ گئے اور اپنی نگرانی میں زخمیوں کا علاج کروایا جبکہ ریسکیو آپریشن میںبوریوالا سنٹر اور وہاڑی سنٹر کی ٹیموں نے حصہ لیا ۔ ٹریفک حادثات مےں شدید زخمی ہونے والے 3 افراد ہسپتال مےں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑگئے ۔پہلاحادثہ صادق آباد کے رہائشی24سالہ محمد چاند کے ساتھ پیش آیا جو اپنی موٹرسائیکل پرسوار ہوکر کام کے سلسلہ مےں جارہاتھاکہ سامنے سے آنیوالے تیز رفتار موٹرسائیکل سوار سے دھماکہ سے ٹکراگیا جس کے نتیجہ میں وہ شدیدزخمی ہوگیا۔ دوسرا حادثہ صادق آباد کے رہائشی45سالہ محمد رشید کے ساتھ پیش آیا جسے سڑک کراس کرنے کے دوران تیز رفتار کار نے ٹکر ماردی جس کے نتیجہ مےں وہ شدیدزخمی ہوگیا جبکہ تیسراحادثہ راجن پور کے رہائشی35سالہ عبدالرزاق کے ساتھ پیش آیا جو اپنی موٹرسائیکل پرسوار ہوکر جارہاتھاکہ فیض آباد کے قریب پیچھے سے آنیوالی تیز رفتار مسافر بس نے ٹکر ماردی جس کے نتیجہ مےں وہ شدیدزخمی ہوگیا ورثاءنے طبی امداد کے لئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں طبی امداد کے اوجود تینوں افراد جانبرنہ ہوپائے اور دم توڑگئے جبکہ مختلف حادثات مےں زخمی ہونے والے37 افراد جن میں مﺅمبارک کارہائشی7سالہ محمد عمر، چک92کا 8سالہ گلا جی، چک111 پی شرقی کا12سالہ محمد حامد، شاہنواز کالونی کی50سالہ ساجدہ بی بی، ڈہرکی کا18سالہ محمدمنور، مدینہ کالونی کا24سالہ محمد زاہد نذیر، خانپور کا36سالہ عبدالقدیر، بستی غریب شاہ کا15سالہ محمد انیس، حبیب کالونی کا24سالہ محمد وسیم، چوک بہادرپورکا22سالہ محمد زین، خانپور کا50 سالہ فرزندعلی، کشمور کا25سالہ محمدسلیم اور32سالہ محمدعرفان وغیرہ کو ہسپتال مےں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔تیز رفتار ایئر کنڈیشن بس نے سڑک کنارے کھڑے نو جوان کو کو کچل ڈالا،زخموں کی تاب نہ لاتے ہسپتا ل میں جاں بحق، ڈرائیور فرار، گزشتہ روز نواحی ماہنی سیال بائی پاس کے نزدیک جواں سالہ محمد رمضان ولد محمد ظفر سکنہ ماہنی سیال کو سڑک پارکر تے ہو ئے مخالف سمت سے آنے والی تیز رفتا ر ائیر کنڈیشن بس نے ٹکر ماری دی بس کی ٹکر سے محمد رمضان شید زخمی ہوگیا جسے ریسکیو 1122نے زخمی حالت میں تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال منتقل کر دیا جہاں وہ کچھ ہی دیر بعد زخموں کی تاب نہ لاتے خالق حقیقی سے جاملا،حادثہ کامرتکب بس ڈرائیور جائے حادثہ سے فرار ہو گیا ، صدر پو لیس نے نعش تحویل میں لے کر کاروائی شروع کر دی ہے۔ ایم ایم روڈ پرمظفرگڑھ سے 17 کلومیٹر دور خانپور بگا شیر ,شاہ والا جنگل کے قریب کیری ڈبہ اور مزدا میں خوفناک تصادم, ایک ہی خاندان کے 4 افراد جاں بحق ہو گئے ۔خانپور بگا شیر شاہ والا جنگل کے قریب کیری ڈبہ اور مزدا میں خوفناک تصادم ایک ہی خاندان کے 4 افراد جاں بحق ہو گئے. جاں بحق افراد میں رفیق ولد واجد مدنی ولد امام بخش ,تحسین ولد شملہ خان, ارشد ولد رمضان جبکہ زخمیوں میں مولوی اسماعیل ولد فضل حسین ,جہانزیب ولد سعید احمد ,ندیم ولد ملک کالو امجد ولد رمضان اورنگزیب ولد سعید احمد شامل ہیں. کیری ڈبہ میں 9 افراد سوار راولپنڈی سے مزدوری کرکےعید منانے کے لئے اپنے شہر بہاولپور جارہے تھے. اطلاع ملتے ہی ریسکیو 1122مظفرگڑھ کی تین ایمبولینسز نےجائے حادثہ پر بروقت رسپانس کرکے فوری زخمیوں کو موقع پر ابتدائی طبی امداد فراہم کرنے کے بعد ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال مظفرگڑھ منتقل کر دیا.روجھان کے نواحی علاقہ تھانہ مزاری گوٹھ میں ایک خاتون کو اس شوہر میرکھ ولد جانو قوم عیسیانی سکنہ تھانہ مزاری گوٹھ نے تشدد کر کے اپنی زوجہ عمر 22 سال کو گلہ دبا قتل کر دیا گیا ایس ایچ او مزاری نزر خان چانڈیہ اپنی پولیس نفری کے ساتھ موقع پر پہنچ گئے اور لاش کو اپنے قبضے میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لئے لاش تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال روجھان منتقل کر دیا جبکہ پولیس نے کاروائی شروع کردی۔دہی کھٹی ہونے پر میاں بیوی میں ہونے والا جھگڑا 2 جانیں لے گیا: ملتان میں معمولی گھریلو تنازع دوہرے قتل کی لرزہ خیز واردات کی وجہ بن گیا۔ بہنوئی نے گھر میں گھس کر اپنے2 سالوں کو چھریوں کے پے درپے وار کر کے بے دردی سے قتل کر ڈالا۔اس واقعہ کی وجہ میاں بیوی کا معمولی جھگڑا تھا تاہم قریبی رشتہ داروں کی طرف سے اس مسئلہ پر بروقت توجہ نہیں دی گئی اور معاملہ بڑھتے بڑھتے قتل تک پہنچ گیا۔ اس دوہرے قتل کی دوسری وجہ پولیس وویمن سنٹر کی طرف سے اس معاملے پر غیرذمہ داری کا ثبوت دینا بھی ہے۔ذرائع کے مطا بق تھانہ سیتل ماڑی کے علاقہ محلہ رحمان پورہ کے رہائشی جاوید اقبال اور ارشد نے تقریباً سات سال قبل اپنی بہن ثمینہ کی شادی پیشے سے پلمبر غلام علی نامی شخص سے کی۔ غلام علی کے ثمینہ سے ایک بیٹا اور ایک بیٹی ہیں، شادی کے کچھ عرصہ بعد سے ہی دونوں میاں بیوی کے درمیان گھریلو ناچاکی اور جھگڑا معمول کی بات تھی۔تھانہ مظفر آباد کے علاقے میں نہر سے سات سالہ نامعلوم بچی کی لاش برآمدہوئی ہے ،تھانہ مظفرا ٓباد کے علاقے بہاوپور سکھا میں نہر سے سات سالہ نامعلوم بچی کی لاش برامد ہوئی۔اطلاع پر تھانہ مظفرا ٓباد پولیس نے لاش قبضہ میں لے پوسٹ مارٹم کرانے کے لئے نشتر ہسپتال کے سرد خانہ میں منتقل کر دی ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ لاش دو روز پرانی ہے اور شبہ ہے کہ معصوم بچی کو زیادتی کے بعد قتل کیا گیا ہے۔مذید حقائق پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد واضح ہو سکیں گے۔ نہر میں نہاتے ہوئے نواحی گا¶ں 100 ای بی کے قریب پاکپتن نہر میں ڈوبنے والے نوجوان کی نعش ریسکیو ٹیم نے نکال لی نعمان ولد ظفر جٹ سکنہ 100 ای۔بی آرمی ملازم تھا جو2دن پہلے ہی فوج سے عید کی چھٹیوں پر گھر آیا تھا اوراپنے بھائی کے ساتھ 100 ای بی کے قریب پاکپتن نہر میں نہاتے ہوئے اسکا چھوٹا بھائی ڈوب گیا بھائی کو بچاتے ہوئے نعمان خود گہرے پانی میں چلا گیا اور ڈوب گیا۔ ریسکیو ٹیموں نے گزشتہ سے پیوستہ روز چھوٹے بھائی کو بچا لیا تھا لیکن رات کے اندھیرے کی وجہ سے سرچ آپریشن روکنا پڑا تاہم ریسکیو ٹیموں نے گزشتہ روزعلی الصبح مسلسل چار گھنٹے کے سرچ آپریشن کے بعد ڈوبنے والے نوجوان کی نعش نکال کر اس کے گھر منتقل کر دی ہے 22 سالہ نوجوان نعمان فوج میں بطور ایتھلیٹ بھرتی ہوا تھا اچانک جوان موت پر علاقہ میں کہرام مچ گیا۔وہاڑی کے نواحی گاو¿ں 553 ای بی میں ٹرانسفارمر کا جمپر لگانے کے لئے بجلی کے پول پر چڑھنے والے 2 افراد کرنٹ لگنے سے جھلس گئے ایک شخص ہسپتال پہنچ کر دم توڑ گیا جبکہ دوسرے کو تشویش ناک حالت میں نشتر ہسپتال ملتان ریفر کر دیا گیا واقعات کے مطابق نواحی گاو¿ں 553ای بی میں ساجد اور عبدالحمید نامی شخص محمد صادق کے ڈیرے پر پرائیویٹ طور پر بجلی کے پول پر چڑھ کر ٹرانسفارمر کا جمپر لگارہے تھے کہ اچانک پول میں کرنٹ آگیا۔کرنٹ لگنے سے دونوں افراد جھلس کر شدید زخمی ہوگئے زخمیوں کو فوری طور پر ڈسٹرکٹ ہسپتال وہاڑی منتقل کیا گیا جہاں عبدالحمید نامی شخص زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا جبکہ ساجد کو انتہائی تشویشناک حالت میں نشتر ہسپتال ملتان ریفر کردیا گیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...