پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھنے سے برآمدی ہدف حاصل نہیں ہوگا‘ راولپنڈی چیمبر

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھنے سے برآمدی ہدف حاصل نہیں ہوگا‘ راولپنڈی ...

  



راولپنڈی (کامرس ڈیسک)ُپٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے سے برآمدات کے اہداف حاصل کرنا مشکل ہیں۔ ٹرانسپورٹیشن لاگت میں اضافے سے اشیا کی ترسیل مہنگی ہو جاتی ہے۔ کاروباری لاگت میں اضافے کا براہ راست اثر برآمدات پرپڑتا ہے۔ امپورٹ بل میں مزید اضافہ ہو گاا ور ادائیگیوں کے توازن میں بگاڑ آئے گا۔معاشی صورتحال پہلے ہی ابتر ہے ایسے میں مزید اضافہ تباہ کن ہو گا۔ مجلس عاملہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے راولپنڈی چیمبر آف کامرس کے صدر ملک شاہد سلیم نے کہا کہ تاجر برادری پہلے ہی مہنگائی کے ہاتھوں تنگ ہے۔ قیمتوں میں اضافہ سے عام آدمی اور کاروباری طبقے کے لیے نہ صرف مشکلات میں اضافہ ہو گا بلکہ اس سے مہنگائی کی ایک نئی لہر آئے گی اور عوام کی قوت خرید کم ہونے سے کاروباری سرگرمیاں بہت متاثر ہوں گی۔ ہمیں انتہائی اقدام پر مجبور نہ کیا جائے۔ ہمارا حکومت سے مطالبہ ہے کہ پٹرولیم مصنوعات پر سیلز ٹیکس اور ڈیوٹی کی شرح میں کمی کر کے ریلیف دیا جائے۔عید کی آمد ہے۔ قیمتوں میں اضافے سے مقامی سیاحت متاثر ہو گی۔ایک طرف حکومت سیاحت کے فروغ اور کاروبار آسان کرنے کے اعلانات اور دعوی کرتی ہے۔ اور دوسری طرف ایسے اقدامات اٹھائے جائے ہیں جس سے کاروبار اور معشیت تباہ ہو رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ روپے کی قدر میں کمی کے باعث عام استعمال کی اشیاء ضروریہ کی قیمتوں میں پہلے ہی کئی گنا اضافہ ہو چکا ہے۔ ملک شاہد سلیم نے کہا کہ پیداواری لاگت کئی گنا بڑھ چکی ہے۔

ایسے میں انہوں نے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ حکومت دانشمندی کا مظاہرہ کرے گی اور قیمتوں میں اضافہ واپس لے گی۔ اجلاس میں سینئر نائب صدر محمد بدر ہارون، نائب صدر فیاض قریشی، سابق صدر زاہد لطیف خان اور مجلس عاملہ کے اراکین نے شرکت کی۔

مزید : کامرس


loading...