حکومت نے دراصل تیسرے جج کیخلاف ریفرنس کیوں ڈراپ کردیا گیا؟ بالآخر اندرونی وجہ سامنے آگئی

حکومت نے دراصل تیسرے جج کیخلاف ریفرنس کیوں ڈراپ کردیا گیا؟ بالآخر اندرونی ...
حکومت نے دراصل تیسرے جج کیخلاف ریفرنس کیوں ڈراپ کردیا گیا؟ بالآخر اندرونی وجہ سامنے آگئی

  



کراچی(ویب ڈیسک) بیرون ملک جائیدادوں کے حوالےسے 3فاضل ججز میں سےتیسرے جج کے خلاف ریفرنس اس لئے ڈراپ کیاگیا کیوںکہ 2015میں وہ اپنی اہلیہ کو طلاق دے چکے تھے۔

روزنامہ جنگ کے ذرائع کا کہنا ہےکہ تیسرے جج صاحب لاہور ہائیکورٹ کے جج صاحب تھے ان کا نام نہیں لینا چاہتے،ان کے حوالے سے یہ بات سامنے آئی تھی کہ ان کی 2015ء میں اپنی اہلیہ سے طلاق ہوچکی تھی اس وجہ سے وہ ریفرنس ڈراپ کردیا گیا تھا۔یاد رہے کہ سپریم جوڈیشل کونسل نے سپریم کورٹ کے جسٹس اور سندھ ہائیکورٹ کے جج کے خلاف حکومتی ریفرنس کو سماعت کیلئے مقرر کر دیاہے اور 14 جون کو سماعت ہو گی  اور اٹارنی جنرل کو نوٹس بھی جاری کر دیاہے ، صدر مملکت عارف علوی نے دو روز قبل جسٹس قاضی فائز عیسیٰ اور سندھ ہائیکورٹ کے جج کے خلاف سپریم جوڈیشل کونسل میں ریفرنس بھجوایا تھا جس میں دونوں ججز کے خلاف آرٹیکل 209 کے تحت کارروائی کی استدعا کی گئی ہے ۔جسٹس قاضی فائز عیسی پر اثاثے چھپانے کا الزام عائد کیا گیاہے ۔

مزید : قومی


loading...