سرکاری ہسپتال سے تین دن کا بچہ چوری، بچے کی جگہ پر متبادل کے طور پر کیا رکھ دیا گیا؟ جان کر آپ کو بھی یقین نہ آئے

سرکاری ہسپتال سے تین دن کا بچہ چوری، بچے کی جگہ پر متبادل کے طور پر کیا رکھ ...
سرکاری ہسپتال سے تین دن کا بچہ چوری، بچے کی جگہ پر متبادل کے طور پر کیا رکھ دیا گیا؟ جان کر آپ کو بھی یقین نہ آئے

  



پٹنہ (دیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست بہار کے ایک سرکاری ہسپتال سے تین یوم کے بچے کو چرالیا گیا ہے، نامعلوم افراد نے نومولود لڑکے کو چرا کر اس کی جگہ پر نومولود بچی رکھ دی۔

ریاست بہار کے شہر مظفر پور کے شری کرشن میڈیکل کالج اینڈ ہسپتال (ایس کے ایم سی ایچ ) کے انتہائی محفوظ وارڈ این آئی سی یو سے تین دن کا بچہ چوری ہوگیا۔ اس وارڈ میں سی سی ٹی وی کیمرے بھی لگے ہوئے تھے لیکن جس رات بچہ چوری ہوا اس رات کی فوٹیج غائب ہے۔ بچے کی گمشدگی کا مقدمہ کراہیا پور تھانے میں درج کرکے ملزمان کی تلاش کا آغاز کردیا گیا ہے لیکن پورا زور لگانے کے باوجود پولیس کے ہاتھ کوئی بھی سراغ نہیں لگا جس کے باعث مقامی لوگوں میں سخت غم و غصہ پایا جاتا ہے۔

پولیس کے مطابق مکیش رام کی بیوی سونی نے جمعرات کو ایک بیٹے کو جنم دیا تھا جسے ایس کے ایم سی ایچ میں داخل کرایا گیا تھا۔ ہفتہ کو دودھ پلانے کے دوران مکیش رام کا بچہ غائب ہوگیا اور اس کی جگہ پر بچی رکھ دی گئی۔ اہلخانہ نے ہنگامہ کیا تو انتظامیہ نے انہیں کہا کہ بچہ بدل گیا ہے جسے ڈھونڈ لیا جائے گا۔

ہسپتال میں جاری اس ہنگامے میں ٹوسٹ اس وقت آیا جب جے مالا کماری نامی ایک خاتون ہسپتال پہنچ گئی اور دعویٰ کردیا کہ مکیش رام کے بیٹے کی جگہ پر اس کی بیٹی کو رکھا گیا ہے۔ جے مالا نے اپنے دعویٰ کی سچائی ثابت کرنے کیلئے کوئی ثبوت فراہم نہیں کیا اور نہ ہی ہسپتال کے ریکارڈ میں بچی کا اندراج موجود ہے جس کے باعث معاملہ مزید الجھتا چلا جا رہا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...