مختصر لباس پہننے والی خواتین کو زیادہ تنخواہ دینے والی کمپنی نے لوگوں کو غصہ چڑھادیا

مختصر لباس پہننے والی خواتین کو زیادہ تنخواہ دینے والی کمپنی نے لوگوں کو غصہ ...
مختصر لباس پہننے والی خواتین کو زیادہ تنخواہ دینے والی کمپنی نے لوگوں کو غصہ چڑھادیا

  



ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) اچھی کارکردگی کے عوض تو کمپنیاں اپنے ملازمین کو بونس اور دیگر مراعات دیتی ہی ہیں لیکن گزشتہ دنوں ایک روسی کمپنی نے ایسے کام کے عوض اپنی خواتین ملازمین کو زیادہ تنخواہ کی پیشکش کر دی کہ انٹرنیٹ پر ہنگامہ برپا ہو گیا۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق اس کمپنی کا نام Tatprofہے جو ایلومینیم مینوفیکچرر ہے، جو” فیمینینٹی میراتھن کیمپین“ (Femininity Marathon Campaign)چلا رہی ہے۔ یہ کیمپین 30جون تک جاری رہے گی۔

کمپنی نے اس کیمپین کے لیے اپنی خواتین ملازمین کو سکرٹ اور دیگر مختلف لباس پہننے کو کہا ہے اور پیشکش کی ہے کہ جو خاتون ملازم مختصر لباس پہنے گی اسے اضافی تنخواہ دی جائے گی۔کمپنی کی طرف سے روسی میڈیا کو بتایا گیا ہے کہ اس کی 60خواتین ملازمین مختصر لباس پہننے پر رضامند ہو گئی ہیں اور اس کیمپین میں حصہ لے رہی ہیں، جلد اور بہت سی ملازمین بھی اس کا حصہ بن جائیں گی۔

کمپنی کے ایک ترجمان نے ریڈیو سٹیشن گووریت موسکوا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ”یہ پیشکش اس کیمپین کے بعد بھی ہماری خواتین ملازمین کے لیے برقرار رہے گی۔ اس پیشکش کے تحت خاتون ملازم کی سکرٹ اس کے گھٹنوں سے 5سینٹی میٹر سے زیادہ لمبی نہیں ہونی چاہیے۔ اس کے بدلے میں کمپنی انہیں سیلری کے علاوہ 100روبلز (تقریباً 224روپے) اضافی دیا کرے گی۔“تاہم کمپنی کی اس پیشکش پر انٹرنیٹ صارفین اسے شدید تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ کون کیا لباس پہنتا ہے یہ اس کا اپنا انتخاب ہے، کمپنی کو لالچ دے کر خواتین کو ان کے اس حق سے محروم نہیں کرنا چاہیے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...