پیراگون ریفرنس، خواجہ برادران کے کیس کی سماعت 17جون تک ملتوی

پیراگون ریفرنس، خواجہ برادران کے کیس کی سماعت 17جون تک ملتوی

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت کے ایڈمن جج جوادالحسن نے پیراگون ہاؤسنگ سوسائٹی ریفرنس میں ملوث خواجہ برادران کے کیس کی سماعت 17جون تک ملتوی کردی،دوران سماعت فاضل جج نے نیب کے پراسیکیوٹر کا مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اگر قانون کے مطابق نہیں چلنا تو نیب بندکردیں،ہر بار قیصر امین بٹ کا بیان قلمبند نہیں کروایا جارہا،اگر ایسا کرنا ہے تو یہ کیس میری عدالت سے ٹرانسفر کروا لیں۔ مسلم لیگ (ن) کے ایم این اے خواجہ سعد رفیق اور ان کے بھائی ایم پی اے خواجہ سلیمان رفیق نے اپنی حاضری مکمل کروائی۔ وعدہ معاف گواہ قیصر امین بٹ سمیت دیگر گواہوں کو عدالت میں فوری طلب کرتے ہوئے نیب کے پراسکیوٹر سے استفسار کیا کہ وہ کہاں ہے؟جس پر پراسیکیوٹر نے کہا کہ وہ بیمار ہیں اور احاطہ میں ایمولینس میں موجود ہے،ان کا ڈاکٹر کمرہ عدالت میں موجود ہے،فاضل جج نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہر پیشی پر ایسے نہیں چلے گا، قیصر امین بٹ کے ہسپتال کا نام بھی کس کو نہیں پتہ،فاضل جج نے مزیدکہا کہ سرکاری ہسپتال میں علاج کروائے جن کی میڈیکل رپورٹس کی حیثیت بھی ہو، اگر قانون کے مطابق نہیں چلنا تو نیب بندکردیں۔ قیصر امین بٹ کو ایمولنس میں پیش کیا گیاجبکہ ان کی حاضری بھی ایمبولنس میں ہی لگوائی گئی۔

پیراگون

مزید :

علاقائی -