کراچی طیارہ حادثہ تحقیقات، پائلٹ کی جانب سے خلاف ورزی کی گئی

کراچی طیارہ حادثہ تحقیقات، پائلٹ کی جانب سے خلاف ورزی کی گئی

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) کراچی طیارہ حادثے کی تحقیقات میں اہم پیش رفت سامنے آئی ہے جس میں پائلٹ کی جانب سے قواعد کی خلاف ورزیوں کا انکشاف ہوا ہے۔سول ایوی ایشن اتھارٹی نے حادثے کا شکار طیارے کے پائلٹ کی جانب سے قواعد کی خلاف ورزیوں سے متعلق رپورٹ جاری کر دی ہے۔ اس سلسلے میں ایڈیشنل ڈائریکٹر آپریشن افتخار احمد نے پی آئی اے کے شعبہ سیفٹی کے جنرل مینیجر کو خط لکھا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ائیر ٹریفک کنٹرولر لینڈنگ سے متعلق کپتان کو ہدایت دیتا رہا۔خط کے متن میں کہا گیا ہے کہ کپتان نے ائیر ٹریفک کنٹرولر کی ہدایت پر عمل نہیں کیا۔ طیارہ کنٹرول زون اپروچ پوائنٹ پر تھا تو اس کی بلندی زیادہ تھی۔ کنٹرولر نے کپتان کو وارننگ دی کہ بلندی زیادہ ہے۔ خط میں کہا گیا ہے کہ طیارہ سات ناٹیکل میل پر تھا تو طیارے کی اونچائی 5 ہزار دو سو فٹ تھی۔ کپتان کو طیارہ بائیں جانب 180 ڈگری پر لے جانے کا کہا گیاجبکہ لینڈنگ کیلئے درکار مطلوبہ رفتار دو سو پچاس ناٹ سے زیادہ تھی۔دریں اثناایئربس ماہرین کی ٹیم نے فلائیٹ ڈیٹا ریکارڈر اور کاک پٹ وائس ریکارڈر کی مرمت کے بعد ڈی کوڈنگ شروع کر دی ہے۔ تفصیل کے مطابق کراچی طیارہ حادثہ کی تحقیقات میں تیزی کا عمل شروع کر دیا گیا ہے۔مرمت اور ڈی کوڈنگ کا کام پاکستانی حکومت کے قائم کردہ انوسٹی گیشن بورڈ کے سربراہ کی موجودگی میں کیا گیا۔

حادثہ تحقیقات

مزید :

صفحہ اول -