رستم میں اندھے قتل کا ڈراپ سین،ملزمان گرفتار

رستم میں اندھے قتل کا ڈراپ سین،ملزمان گرفتار

  

رستم(نمائندہ پاکستان) تھانہ شہباز گڑھی پولیس نے 48 گھنٹوں میں اندھے قتل کا سراغ لگا کر ملزما ن کو گرفتار کر لیا، ملزمان نے اعتراف جرم لیا، آلہ قتل بھی برآمد۔ تفصیلات کے مطابق مورخہ 29مئی کو تھانہ شہباز گڑھی کی حدود گڑیالہ میں دوہرے قتل کا واقع پیش آیا تھا جس کی رپورٹ مسماۃ (آ) نے رستم(تحصیل رپورٹر)تھانہ شہباز گڑھی میں نا معلوم ملزمان کے خلاف درج کرائی تھی واقع کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی پی او سجاد خان نے اصل حقائق سامنے لانے کیلئے ڈی ایس پی رورل سرکل گل شید خان کی سربراہی میں ایس ایچ او تھانہ شہباز گڑھی مومند خان اور تفتیشی افسران پر مشتمل خصوصی ٹیم تشکیل دی جنہوں نے کیس کا مختلف زاویوں اور پیشہ ورانہ حکمت عملی کے ذریعے واردات میں ملوث اصل ملزمان آفتاب احمد ولد گل اکبر اور اسد ولد انور علی ساکنان بہرام شاہ گڑیالہ تک رسائی حاصل کر کے گرفتار کر لیا، گرفتار ملزمان نے دوران انٹاروگیشن اپنے جرم کا اعتراف کرتے ہوئے پولیس کو بتایا کہ مقتول فاروق اور مقتولہ مسماۃ (ز) کے مابین کئی برسوں سے غیرشرعی تعلقات استوار تھے، جس پر مقتولہ کے بیٹے آفتاب کو شدید رنج تھا جس پر اس نے اپنے شریک واردات ساتھی اسد کے ہمراہ دونوں کو مارنے کا منصوبہ بنایا اورموقع پاکر مقتولین کو موت کے گھاٹ اتار دیا، گرفتار ملزمان کی نشاندہی پر واردات میں استعمال ہونے والا اسلحہ ایک عدد کلاشنکوف اور ایک عدد رائفل برآمد کر لیا گیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -