چین میں پھنسے پاکستانی طالبعلموں کے ساتھ حکومت کا ایسا سلوک کہ سن کر آپ کے رونگٹے کھڑے ہو جائیں گے

چین میں پھنسے پاکستانی طالبعلموں کے ساتھ حکومت کا ایسا سلوک کہ سن کر آپ کے ...
چین میں پھنسے پاکستانی طالبعلموں کے ساتھ حکومت کا ایسا سلوک کہ سن کر آپ کے رونگٹے کھڑے ہو جائیں گے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )چین کے شہر ووہان سے شروع ہونے والے کورونا وائرس نے اس وقت پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے اور پاکستان میں بھی تیزی کے ساتھ اس کے کیسز میں اضافہ ہوتا دکھائی دے رہاہے ۔

اس وائرس کا آغاز سب سے پہلے چین کے شہر ووہان سے ہوا جہاں متعدد کیسز سامنے آنے کے بعد چینی حکومت نے اسے مکمل لاک ڈاﺅن کر دیا اور کسی بھی بھی شہر چھوڑنے یا آنے کی اجازت نہیں تھی تاہم کئی مہینوں کی مسلسل جدوجہد کے بعد چین نے اس وبا پر قابو پایا اور لاک ڈاﺅن کو کھولا۔

سخت لاک ڈاﺅن کے باعث چین میں تعلیم کی غرض سے موجود پاکستان طالبعلم بھی وہاں پھنس کر رہ گئے ، چینی حکومت کی جانب سے پاکستانی شہریوں کا بھر پور خیال رکھا گیا تاہم اب لاک ڈاﺅن کھل چکا ہے اور وہ واپس وطن آنا چاہتے ہیں تو ایسی صورتحال میں سینئر صحافی طلعت حسین نے ایسا انکشاف کر دیاہے کہ سن کر آپ کے پیروں تلے بھی زمین ہی نکل جائے گی ۔

سینئر صحافی طلعت حسین نے ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ ”پاکستانی طالبعلم گزشتہ پانچ ماہ سے چین کے شہر ووہان میں پھنسے ہوئے ہیں ، ان کی پچاس ہزار میں سیٹ بکنگ موجود تھی جو کہ منسوخ کر دی گئی ہے اور انہیں کہا جارہاہے کہ ایک لاکھ روپے دے کر سیٹ بک کروائیں ، کس طرح کی حکومت اپنے لوگوں کے ساتھ ایسا کرتی ہے ؟وہ لوگ کس قدر شرم سے خالی ہیں جو کہ کیمروں کے سامنے بیٹھ کر اچھا کام کرنے کا دعویٰ کرتے ہیں ؟“۔

مزید :

قومی -