فلاح انسانےت فائونڈیشن کے تحت قحط زدہ علاقوں میں کنوﺅں کی تعمیر جاری

فلاح انسانےت فائونڈیشن کے تحت قحط زدہ علاقوں میں کنوﺅں کی تعمیر جاری

لاہور(سٹاف رپورٹر) فلاح انسانیت فاﺅنڈیشن کی طرف سے سندھ و بلوچستان کے قحط زدہ علاقوں میں مزید 32کنوﺅں کی تعمیر آخری مراحل میں پہنچ گئی ۔ 50لاکھ روپے سے زائد مالیت سے تعمیر کئے جانے والے یہ کنویں رواں ماہ کے اختتام تک مکمل ہو جائیں گے۔ فراہمی آب پروگرام کے تحت ایف آئی ایف کی جانب سے تھرپارکرسندھ اور بلوچستان کے مختلف علاقوں میں اب تک 1022ہینڈ پمپ، الیکٹرک پمپ اور پانی کے کنویں کھدوائے جا چکے ہیں۔ فلاح انسانیت فاﺅنڈیشن پاکستان کے چیئرمین حافظ عبدالرﺅف نے بتایا ہے کہ اسی ماہ کے اختتام تک مکمل ہونے والے 32کنوﺅں کی تعمیر سے سندھ و بلوچستان کے وہ ہزاروں افراد اس سہولت سے بآسانی فائدہ اٹھا سکیں گے جنہیں صاف پانی کیلئے دور دراز کا سفر کرنا پڑتا ہے۔ایف آئی ایف فراہمی آب منصوبہ جات پر اب تک کروڑوں روپے خرچ کر چکی ہے۔ پچھلے پندرہ سال سے سندھ و بلوچستان کے قحط زدہ علاقوں سمیت آزاد کشمیر، جنوبی پنجاب اور بلتستان میں صاف پانی کی فراہمی کیلئے ہینڈ پمپ، الیکٹرک پمپ وغیرہ کی تنصیب اور کنوﺅں کی کھدوائی کا کام کیا جارہا ہے اور یہ سلسلہ ہم انشا ءاللہ جاری رکھیںگے۔انہوںنے کہاکہ فلاح انسانیت فاﺅنڈیشن بلوچستان میں ریلیف کے بڑے منصوبہ جات پر کام کر رہی ہے جن پر کروڑوں روپے خرچ کئے جائیں گے۔اسی طرح تھرپارکر سندھ میں پندرہ سے اٹھارہ مارچ تک چار روزہ فری میڈیکل کیمپ لگائے جائیں گے جہاں سپیشلسٹ ڈاکٹرز اور پروفیسرزحضرات مریضوں کا طبی معائنہ کریں گے اور مریضوں میں مفت ادویات تقسیم کی جائیں گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1