ایم کیو ایم آل پاکستان مسلم لیگ اور حکومتی جماعتوں سے ہر گز اتحاد نہیں ہوگا ، عمران خان

ایم کیو ایم آل پاکستان مسلم لیگ اور حکومتی جماعتوں سے ہر گز اتحاد نہیں ہوگا ، ...

اسلام آباد(این این آئی) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے تحریک انصاف ایم کیو ایم اور آل پاکستان مسلم لیگ سے آئندہ عام انتخابات کےلئے کسی قسم کا اتحاد نہیںکرے گی، جے یو آئی کی آل پارٹیز کانفرنس مکمل طور پر ایک سیاسی شعبدہ بازی تھی ،کراچی کے حالات تباہی کی طرف جارہے ہیں عوام نے خود اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنا ہے،مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف کے مقاصد مختلف ہیں ،نواز لیگ اقتدار جبکہ تحریک انصاف نیا پاکستان بنانے کے نظریے پر کام کر رہی ہے ،اقتدار میں آکر فوری طور پر ملک کو امریکی جنگ سے نکالیں گے،ملکی اداروں کی تباہی کے ذمہ دار سیاست دان ہیں،بیوروکریسی کو ٹھیک کرنے کےلئے مضبوط پبلک سروس کمیشن بنانا ہوگا،آئندہ الیکشن میں اگر د ھاندلی کی کوشش کی گئی تو ملک میں خون خرابہ ہوگا،تحریک انصاف کبھی اسٹیٹس کو سیاست کرکے نہیں جیت سکتی،جاوید ہاشمی اور شاہ محمود قریشی پر کوئی انگلی نہیں اٹھا سکتا،مقصد اگر ا لیکشن جیتنا ہوتا تو ہم بھی کرپٹ ، ٹیکس چوروں اور دوہری شہریت والوں کو شامل کر لیتے، 23مارچ کو قوم نیا سونامی دیکھے گی،تحریک انصاف آئندہ الیکشن میںواضح اکثریت حاصل کرکے اکیلے ہی حکومت بنائے گی۔ مسلم لیگ نواز اور پیپلز پارٹی میں آئندہ بھی خفیہ معاہدہ جاری رہے گا،جے یو آئی ایف کی اے پی سی میں اصولی بنیادوں پر شرکت نہیں کی ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہفتہ کو اپنے ایک بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم تبدیلی کی سیاست کر رہے ہیں اور اگر ہم نے اسٹیٹس کو کی سیاست کرنا شروع کر دی تو ملک میں تبدیلی نہیں آئےگی، انہوں نے کہا کہ ملک میں تبدیلی اسٹیٹس کو ذریعے نہیں بلکہ ایک تحریک اور انقلاب کے ذریعے آئےگی جیسا انقلاب بھٹو اور ایم ایم اے کا تھا۔ عمران خان نے کہا کہ انٹرا پارٹی الیکشن کارکنوں کے اند ر انقلاب لےکر آئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ خواتین کی مخصوص نشستو ں کی کبھی مخالفت نہیںکی بلکہ یہ کہا ہے کہ باقاعدہ الیکشن کروا کر گراس روٹ لیول سے منتخب ہوکر آنے والی عورتوں کو نمائندگی دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ ملکی تمام مسائل کے حل کےلئے پالیساں بنا رہی ہے جن میں بلدیاتی نظام اورپولیس شامل ہیں، انہوں نے کہا کہ آئندہ الیکشن میںتحر یک انصاف موجودہ حکومتوں میں شامل جماعتیںاور ایم کیو ایم ، اے پی ایم ایل سے اتحاد نہیں کرے گی اور اکیلے ہی الیکشن میں واضح اکثریت حاصل کر کے حکومت بنائے گی ، انہوں نے کہا جے یو آئی کی آل پارٹیز کانفرنس مکمل طور پر ایک سیاسی شعبدہ بازی تھی اور تحریک انصاف کی اس میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ اصولی تھا۔ انہوںنے کہا قبائیلی علاقوں میں امن صرف مذاکرات کے ذریعے ہی ہوسکتے ہیں اور اس حوالے سے تحریک انصاف مذاکرات کرے گی اور فوج کا استعمال قبائلیوں کے مشورے سے ہوگا، انہوں نے کہا کہ کراچی کے حالات تباہی کی طرف جارہے ہیں، کراچی سے امن وامان کی خراب صورتحال کی وجہ سرمایہ کار اپنا سرمایہ بیرونِ ملک منتقل کرہے ہیں جو بہت الارمنگ صورتحال ہے۔

عمران خان

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...