لاہور ہائیکورٹ 6ایڈیشنل ججوں کو مستقبل کرنے کا معاملہ مئو خر ملازمت میں 6ماہ کی توسیع

لاہور ہائیکورٹ 6ایڈیشنل ججوں کو مستقبل کرنے کا معاملہ مئو خر ملازمت میں 6ماہ ...

لاہور (نامہ نگار خصوصی) جوڈیشل کمیشن نے لاہور ہائیکورٹ کے 6 ایڈیشنل ججوں کو مستقل کرنے کا معاملہ موخر کرتے ہوئے ان کی مدت ملازمت میں 6 ماہ کی توسیع کی منظوری دیدی ہے اور اسے توثیق کے لئے پارلیمانی کمیٹی کو بھیج دیا ہے۔ جوڈیشل کمیشن کا اجلاس گزشتہ روز چیف جسٹس پاکستان مسٹر جسٹس افتخار محمد چودھری کی زیر صدارت اسلام آباد میں ہوا۔ اجلاس میں وکلاءاور حکومتی نمائندے شریک نہیں ہوئے۔ لاہور ہائیکورٹ کے جن ججوں کو توسیع ملی ہے ان میں مسٹر جسٹس عباد الرحمن لودھی، عبدالسمیع خان، جسٹس عائشہ اے ملک ،،مسٹر جسٹس شجاعت علی خان ،مسٹر جسٹس شیخ شاہد وحید اور مسٹر جسٹس علی باقر نجفی شامل ہیں۔ ذرائع کے مطابق چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے ان ججوں کی مستقلی کے معاملے کو ایک سال کے لئے موخر کرنے کی سفارش کی تھی تاہم جوڈیشل کمیشن کے اجلاس میں متفقہ طور پر طے پایا کہ ان ججوں کی مدت ملازمت میں 6 ماہ کی توسیع کردی جائے جس کے بعد ان کی کنفرمیشن کے معاملے کا دوبارہ جائزہ لیا جائے گا۔ روزنامہ ”پاکستان“ نے گزشتہ روز ہی خبر شائع کر دی تھی کہ ان ایڈیشنل ججوں کی مستقلی کا معاملہ موخر کرنے کی تجویز دے دی گئی ہے اور ان ججوں کی مدت ملازمت میں توسیع کی جا رہی ہے۔ یوں روزنامہ ”پاکستان“ نے اپنے قارئین کو سب سے پہلے خبر سے آگاہ کرنے کا اپنا اعزاز برقرار رکھا۔ ان میں سے مسٹر جسٹس علی باقر نجفی کے سوا 5 جج صاحبان نے 27 مارچ 2012ءکو ایک سال کے لئے ایڈیشنل جج کے طور پر حلف اٹھایا تھا جبکہ مسٹر جسٹس علی باقر نجفی اپریل 2012ءمیں ہائیکورٹ کے ایڈیشنل جج مقرر ہوئے تھے۔

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...