بینک الفلاح12.604ارب روپے کا قبل از ٹیکس منافع حاصل

بینک الفلاح12.604ارب روپے کا قبل از ٹیکس منافع حاصل

  

کراچی(آن لائن) بینک الفلاح نے 31دسمبر 2015کو اختتام پذیر ہونے والے مالیاتی سال کے دوران 12.604ارب روپے کا شاندار قبل از ٹیکس منافع حاصل کیا ہے، جو کہ گزشتہ سال کے مقابلے میں اڑتالیس فی صد زیادہ ہے۔ بنک کا بعد از ٹیکس منافع گزشتہ سال دسمبر 2014 کے منافع 5.641ارب روپے کے مقابلے میں 7.523ارب روپے رہا۔ فی حصص آمدن دسمبر 2014 میں 4.09 روپے کے مقابلے میں سال 2015 میں 4.73روپے رہا۔بینک الفلاح کے صدر اور سی ای او عاطف باجوہ نے کہا کہ سال 2015میں بینک الفلاح کی نمایاں کارکردگی اس کے شاندار مالیاتی نتائج سے عیاں ہوتی ہے۔

بورڈ آف ڈائریکٹر ز نے بینک کی مسلسل نمایاں کارکردگی کی تحسین کی ہے اور اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ وہ انتظامیہ کے ساتھبینک کی معاشی بنیادوں کو استحکام بخشنے اور صارفین کو نفع پہنچانے کے عمل میں ہر قسم کا تعاون کرتے رہیں گے۔ ہم اس عزم کا اعادہ کرتے ہیں کہشیئر ہولڈرز کو دوررس فوائد پہنچاتے رہیں گے ،ہم نے اپنی کاروباری حکمت عملی صارفینکی خدمت کے پیش نظر وضع کی ہے تاکہ وہ اپنی زندگی اور کاروبار میں بیک وقت کامیابی حاصل کرسکیں‘‘۔ بینک الفلاح کی کارکردگی میں نمایاں اضافہ بہتر آمدن کی بدولت ہوا۔ بنک کی بنیادی آمدنی میں امسال بائیسفی صد اضافہ دیکھنے میں آیا جو کہ سال کے اختتام پر 37.489ارب روپے تک جاپہنچا۔ امسال بنک کے اخراجات کی نگرانی کے لیے وضع کردہ نظام کو زیادہ موثر بنایاگیا جس سے آمدن و لاگت کا تناسبساٹھ فی صد رہا، جوکہ گزشتہ سال سڑسٹھ فی صد کے مقابلے میں کہیں بہترہے۔بینک کے کل اثاثوں کا مالیتگزشتہ سال کے مقابلے میں اکیس فی صد اضافے کے بعد902.607 ارب روپے رہی۔ختمِ دورانیہ ڈپازٹ چھے فی صد اضافہ کے بعد 640.189 ارب روپے تک چا پہنچا جبکہ بنک کی CASA شرح گزشتہ سال کے مقابلے میں انہتر فی صد سے بڑ ھ کر پچہتر فی صد ہوگئی۔ بنک سے قرضوں کی فراہمی میں بھی زبردست اضافہ دیکھنے میں آیا۔ گزشتہ سال کے مقابلے میں تیرہ فی صد اضافے کے بعد بینک سے قرضوں کی فراہمی کی قدر 343.490 ارب روپے سے تجاوز کرگئی۔ نجی شعبے کو قرضوں کی فراہمی میں تیزی کے باعث بینک کا ADR سال 2015میں 54 فی صد رہا جو کہ بینکاری شعبے میں سرفہرست ہے۔ بورڈ نے رواں سال کے لیے دس فیصد نقد منافع کی سفارش کی ہے جسے بینک کی سالانہ جنرل میٹنگ میں شیئر ہولڈرز کی منظوری کے بعد لاگوکیا جائے گا۔

02-03-16/--148

مزید :

کامرس -