غیر محرم سے ملنے کی سزا، انڈونیشین لڑکی کو سرعام کوڑے مارنے کی سزا

غیر محرم سے ملنے کی سزا، انڈونیشین لڑکی کو سرعام کوڑے مارنے کی سزا

  

بندے آچے(آن لائن) انڈونیشیا کے صوبے آچے میں ایک 19 سال لڑکی کو غیر محرم کے ساتھ میل ملاپ پر کوڑوں کی سزا دی گئی ہے۔ اس لڑکی پر الزام تھا کہ وہ چھپ چھپ کر ایک 21 سالہ نوجوان سے ملاقاتیں کرتی ہے۔ اس لڑکی کے ہمراہ اس کے نوجوان ساتھی کو بھی سرعام کوڑے مارنے کی سزا دی گئی۔واضح رہے کہ صوبہ آچے انڈویشیا کے دارالحکومت جکارتہ سے قریباً ایک ہزار کلومیٹر جنوب مغرب میں واقع ہے۔ یہ مسلم اکثریتی ملک کا سب سے زیادہ قدامت پسند صوبہ ہے۔ آچے کو خصوصی خود مختاری حاصل ہے اور اس صوبے میں شریعت کی بنیاد پر قوانین نافذ ہیں جو ملک کے کسی دوسرے علاقے میں نافذ نہیں ہیں۔ شرعی قانون کے تحت کسی نامحرم مرد اور عورت کا تنہائی میں اکٹھے ہونا یا خلوت میں بیٹھنا جْرم ہے۔

مزید :

عالمی منظر -