چادر اور چار دیواری کا تقدس پا مال ،پولیس اہلکاروں کا معمر خاتون پر تشدد ،گھر کا سامان بھی لوٹ لیا

چادر اور چار دیواری کا تقدس پا مال ،پولیس اہلکاروں کا معمر خاتون پر تشدد ...

  

لاہور(وقائع نگار)شاہدرہ پولیس کے اہلکاروں نے چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال کرتے ہوئے بزرگ خاتون پر تشدد کرتے ہوئے گھر میں گھس گئے ، ہزاروں روپے کی نقدی لوٹ لی اور موقع سے فرار ہو گئے ۔متاثرہ نے پولیس اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی درخواست دے دی لیکن تاحال پولیس اپنے پیٹی بھائی کی مدد کرنے اور اس کا ساتھ دیتے ہوئے تاحال ملزم کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی ہے ۔متاثرہ شخص کا الزام ۔نمائندہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے متاثرہ شخص محمد عدنان علی نے موقف اختیار کیا کہ وہ مکان نمبر 5گلی نمبر 5رجپت روڈ شاہدرہ کا رہائشی ہے ۔گزشتہ روز شاہدرہ تھانہ میں تعینات سب انسپکٹر افضل باجوہ بغیر کسی وجہ کے ان کے گھر آ یا جب کہ گھر میں اس کی والدہ ،بیوی اوربہن کے علاوہ کوئی موجود نہیں تھا ۔اس کی والدہ نے دروازہ کھولا تو سب انسپکٹر افضل باجوہ نے دھکا دیکر ان کو زمین پر پھینک دیا جس کی وجہ سے ان کی ٹانگ پر شدید چوٹ آئی اور وہ بری طرح زخمی ہو گئیں ۔بعد ازاں سب انسپکٹر نے اپنے دیگر ساتھی اہلکاروں کے ساتھ مل کر ان کے گھر کا تمام سامان بکھیر دیا اور خواتین کی جانب سے مزاحمت کرنے پر ان کو زد وکوب کیا ۔خواتین کے شور مچانے پر اہل علاقہ اکٹھے ہو گئے جس پر ملزم پولیس اہلکار موقع سے فرار ہو گئے ۔انہوں نے بتایا کہ اس حوالے سے انہوں نے تھانہ شاہدرہ میں درخواست دے دی ہے لیکن پولیس کی جانب سے کارروائی میں لیت و لعل سے کام لیا جا رہا ہے اور ملزمان کو تھانہ میں وی وی آئی پی پروٹوکول دیا جا رہا ہے ۔دوسری جانب دیگر پولیس اہلکار ان پر صلح کرنے اور درخواست واپس لینے کے لیے بھی دباو ڈال رہے ہیں ۔انہوں نے پولیس حکام سے اپیل کی ہے کہ معاملہ کی انکوائری کی جائے ملزمان کو گرفتار کرتے ہوئے ان کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے ورنہ وہ سی سی پی او آفس کے سامنے احتجاج کریں گے اور ملزمان کے خلاف کارروائی نہ ہونے تک دھرنا دیں گے ۔

مزید :

علاقائی -