ممتاز قادری کو پھانسی ، 30اہلسنّت جماعتوں کا کل یوم احتجاج منانے کااعلان

ممتاز قادری کو پھانسی ، 30اہلسنّت جماعتوں کا کل یوم احتجاج منانے کااعلان

  

لاہور (نمائندہ خصوصی ) سنی اتحاد کونسل پاکستان کی دعوت پر جامعہ انوار مدینہ میں منعقد ہونیوالی 30اہلسنّت جماعتوں کے اجلاس کے اعلامیہ میں کہا گیاہے کہ اہلسنّت جماعتیں حکومت کے خلاف تحریک نفرت چلائیں گی۔ غیر شرعی حقوق نسوان بل اور ممتاز قادری کی پھانسی کے خلاف ہر ضلع میں احتجاجی مظاہرہ کئے جائیں گے ۔ جمعہ 4مارچ کو ملک گیر یوم احتجاج منایا جائے گااور ملک بھر میں نامو س رسالت کے موضوع پر خطبات جمعہ دیئے جائیں گے اور جمعہ کے اجتماعات میں پاکستان کو لبرل بنانے کی حکومتی کوششوں کے خلاف مذمتی قرار دادیں بھی منظور کی جائیں گی اور ممتاز قادری کی غیر شرعی پھانسی کے خلاف احتجاجی مظاہرے بھی کئے جائیں گے۔اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کے اسلامی تشخص کو مٹانے کی حکومتی کوششوں کی مزاحمت کی جائیگی۔ سزا یافتہ گستاخان رسول کو پھانسی دی جائے او ر آسیہ مسیح کو سنائی گئی سزا پر عملدر آمد کروایا جائے۔تحفظ نسواں بل قر آن و سنت سے متصادم ہے ۔ حقوق نسواں بل کو واپس لیا جائے۔حکمران اسلام کو دیس نکالا دینے سے باز آجائیں ۔ پاکستان کو سیکولر بنانا خلاف آئین ہے۔مشترکہ اجلاس کی صدارت سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کی۔ اجلاس میں سنی اتحاد کونسل ، جماعت اہلسنّت پاکستان،مرکزی جے یو پی، انجمن طلباء اسلام، تحریک مشائخ پاکستان، تنظیم المساجد پاکستان ، مصطفائی جسٹس فورم ، مصطفائی تحریک، انجمن نوجوانان اسلام ، سنی یوتھ ونگ، سنی علماء بورڈ، جانثاران ختم نبوت، تحریک فروغ اسلام ، بزم محدث اعظم ، تحریک نفاذ فقہ حنفیہ ، نیشنل مشائخ کونسل اور دیگر جماعتوں کے رہنماؤں نے شرکت کی ۔ اجلاس سے صدارتی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کا مقدر سیکولر ازم نہیں نظام مصطفی ہے۔ممتاز قادری کا جنازہ اس کے حق پر ہونے کی گواہی تھا۔ لاکھوں افراد نے پر امن رہ کر امن پسندی ثابت کر دی ۔

مزید :

صفحہ آخر -