12اور13مارچ کو حکومت سے علیحدگی کا اعلان کر سکتے ہیں،حافظ حسین احمد

12اور13مارچ کو حکومت سے علیحدگی کا اعلان کر سکتے ہیں،حافظ حسین احمد

  

پشاور(اے این این )جمعیت علمائے اسلام (ف) کے مرکزی رہنماحافظ حسین احمد نے کہا ہے کہ ہماری جماعت 12اور13مارچ کو جنرل کونسل کے اجلاس میں حکومت سے الگ ہونے کا اعلان کر سکتی ہے،تحفظ خواتین بل کے حوالے سے مذہبی جماعتوں کوپس پشت ڈا لا گیا،یہ بل جلد بازی اور مضحکہ خیز طریقے سے پیش کیا گیا،اب تو اسلامی نظریاتی کونسل نے بھی بل کو مسترد کر دیا ہے ۔پشاور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ حافظ حسین احمد کا کہنا تھا کہ تحفظ نسواں بل جلدبازی اورمضحکہ خیز طریقے سے پیش کیاگیا، حکومت سے یک طرفہ تعاون نہیں کیاجاسکتا۔ جمعیت علمائے اسلام(ف)کی جنرل کونسل کااجلاس 12 اور 13 مارچ کوطلب کرلیاگیا۔ اجلاس میں حکومت سے علیحدگی کا آپشن بھی زیر غور آ سکتا ہے۔ جے یو آئی کی جنرل کونسل کا اجلاس 13، 12 مارچ کو لاہور میں ہو گا جس کی صدارت مولانا فضل الرحمان کریں گے۔ اب تو اسلامی نظریاتی کونسل نے بھی بل کو مسترد کر دیا ہے، آئین کے آرٹیکل 230 کے تحت اسلامی نظریاتی کونسل سے سفارش نہیں لی گئی، اتحادی کی حیثیت سے جے یو آئی(ف) کو بھی اعتماد میں نہیں لیا گیا اور مذہبی جامعتوں کو پس پشت ڈالا گیا، مغرب کی خوشنودی کیلئے تحفظ حقوق نسواں بل لایا جا رہا ہے۔

مزید :

کراچی صفحہ آخر -