محکمہ غذائی تحفظ کے گردشی قرضے 120 ارب روپے تک جاپہنچے

محکمہ غذائی تحفظ کے گردشی قرضے 120 ارب روپے تک جاپہنچے
محکمہ غذائی تحفظ کے گردشی قرضے 120 ارب روپے تک جاپہنچے

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) بجلی کے بعد محکمہ غذائی تحفظ میں بھی گردشی قرشے سر اٹھانے لگے اور معاملہ 120 ارب روپے تک جاپہنچا۔

نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق گندم کی نئی فصل کی آمد آمد ہے اور پہلے والا سٹاک ختم نہیں ہوا جبکہ گردشی قرضوں کے بڑھنے کی وجہ سے حکام نے سر پکڑ لیے۔ ملک میں 30 لاکھ ٹن گندم موجود جبکہ نئی فصل بھی تیار ہے پرانی گندم برآمد نہیں کی جاسکتی اور نئی فصل پر 34 لاکھ ٹن گندم پھر خریدنا ہوگی۔

سندھ گندم کے ذخائر پر ہر ماہ 50 کروڑ روپے سود ادا کررہا ہے جبکہ وفاق نے پنجاب حکومت کو گندم پر سبسڈی کی مد میں 50 ارب روپے ادا کرنے ہیںجس کی وجہ سے محکمہ غذائی تحفظ کے گردشی قرضے 120 ارب روپے تک جاپہنچے ہیں اور نئی فصل پر پھر قرضہ لینا پڑے گا۔

مزید :

بزنس -اہم خبریں -