”سمجھ نہیں آتاصلح کی باتیں شروع ہو تے ہی کون حملے شروع کردیتاہے “: افغان سفیر

”سمجھ نہیں آتاصلح کی باتیں شروع ہو تے ہی کون حملے شروع کردیتاہے “: افغان سفیر
”سمجھ نہیں آتاصلح کی باتیں شروع ہو تے ہی کون حملے شروع کردیتاہے “: افغان سفیر

  

 پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک)افغان سفیرڈاکٹرمحمدعمرزاخیل وال نے کہا ہے کہ امن دشمن پاکستان اور افغانستان کے درمیان مذاکرات ہوتا نہیں دیکھ سکتے، باچاخان یونیورسٹی اورکنڑمیں حملے مذاکرات کوسبوتاڑکرنےکی کوشش ہیں۔

پشاور میں میڈ یا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ دونوں جانب ایسے عناصرموجودہیں جوصلح ہوتی نہیں دیکھ سکتے تاہم ہمیں امن کے قیام کےلئے تمام اختلافی باتوں کوچھوڑناہوگا،افغانستان کبھی بھی پاکستان مخالف قوتوں کواپنے ہاں پناہ نہیں دیتا۔ افغان سفیر کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان اور افغانستان کے مابین مذاکرات جاری رہنے چاہئیں تاہم انہیں سمجھ نہیں آتاصلح کی باتیں شروع ہو تے ہی کون حملے شروع کردیتاہے ۔

مزید :

پشاور -