وزارت مذہبی امور نے سارا کوٹہ سرکاری سکیم میں لیجانے سے ہاتھ کھڑے کر دئیے

وزارت مذہبی امور نے سارا کوٹہ سرکاری سکیم میں لیجانے سے ہاتھ کھڑے کر دئیے

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل)پراپرٹی کمیشن مافیا کومایوسی کا سامنا ،وزارت مذہبی امور کے بڑے حلقے نے حج2018ء کا سارا کوٹہ سرکاری سکیم میں لے جانے سے ہاتھ کھڑے کر دئیے اتنے بڑے پیمانے پر انتظامات وزارت کے لیے ممکن نہیں ،پرائیویٹ سکیم میں جانے والے وی آئی پی سرکاری سکیم میں جانے کے لیے تیار نہیں زمینی حقائق سامنے رکھنے چاہیے وزارت مذہبی امور کے ذمہ داران کی روزنامہ پاکستان سے گفتگو،ان کا کہنا ہے اس میں شک نہیں کہ سستا حج ہونے کی وجہ سے سرکاری سکیم کی ڈیمانڈ بہت زیادہ ہے وفاقی کابینہ کی بھی یہی خواہش ہے مگر عملی طور پر ایسا ممکن نہیں ہے کیونکہ وی آئی پی کو سنبھالنا وزارت مذہبی امور کے بس میں نہیں ہے ،دوسری طرف پیپلز پارٹی کے دور میں سرکاری سکیم کی عمارتوں کے ذریعے کمیشن حاصل کرنے والا مافیا کا بینہ کے ممبران سے ملاقاتیں کر رہا ہے ان کو سرکاری سکیم کی عوامی سطح پر مقبولیت کا جواز بتا رہے ہیں یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ مکہ مدینہ کے پراپرٹی ایجنٹ کے نامزد بروکر ان کے لیے لابنگ میں مصروف ہیں وزارت مذہبی امور کے افسران کسی سے ملاقات کرنے کے لیے تیار نہیں ہیں جس کی وجہ سے کمیشن مافیا مایوس ہو گیا ہے ۔

مزید : صفحہ آخر