کابل کے سفارتی علاقے میں خودکش حملہ، 5افراد ہلاک، 22زخمی

کابل کے سفارتی علاقے میں خودکش حملہ، 5افراد ہلاک، 22زخمی

کابل(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) افغانستان کے دارالحکومت کابل کے علاقے قبل بائی میں خودکش کار بم دھماکے کے نتیجے میں 5افراد ہلاک جبکہ 22 سے زائد زخمی ہو گئے ۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ترجمان افغان وزارت داخلہ نجیب دانش نے بتایا دھماکا جمعہ کی صبح 9 بجے کے قریب قبل بائی کے علاقے میں ہوا، جس کا ہدف غیر ملکی فورسز کا قافلہ تھا۔نیٹو کے ریسولوٹ سپورٹ مشن نے اے ایف پی کو بتایا اس با ت کا جائزہ لیا جارہا ہے دھماکے میں کوئی غیرملکی تو ہلاک نہیں ہوا، علاقے کے پولیس ترجمان بسم اللہ تابان کے مطابق دھماکہ خودکش تھا، واقعہ کے بعد امدادی اہلکاروں نے زخمیوں کو قریبی ہسپتال منتقل کیا جبکہ سکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لیکر شواہد اکھٹے کرنا شروع کردیئے،جبکہ ترجمان وزارت صحت نے تصدیق کی ہے کہ دھماکے میں جاں بحق اور زخمی سب عام شہری ہیں، عینی شاہدین کا کہنا ہے دھماکا اس قدر شدید تھا کہ آس پاس کی گاڑیوں میں آگ لگ گئی اور اس کی آواز دور دور تک سنی گئی جبکہ آس پاس گھروں کو بھی نقصان پہنچا۔ابھی تک دھماکے کی ذمہ داری کسی گروپ کی جانب سے قبول نہیں کی گئی۔یہ دھماکا ایک ایسے وقت میں ہوا ہے، جب دو روز قبل افغان صدر اشرف غنی نے طالبان کو مذاکرات کی پیشکش کرتے ہوئے کہا تھا امن طالبان کے ہاتھ میں ہے۔گزشتہ ماہ 24 فروری کو بھی افغانستان کے مختلف شہروں میں بم دھماکوں کے نتیجے میں فوجی اہلکاروں سمیت 25 سے زائد افراد ہلاک ہوگئے تھے۔واضح رہے رواں برس کے آغاز سے افغان دارالحکومت میں متعدد بڑے دہشت گرد حملے ہوئے، جن کے نتیجے میں 130 سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

مزید : صفحہ آخر