نقیب قتل کیس، راؤ انور کے دست راست ڈی ایس پی قمر احمد کو جیل بھیجنے کا حکم

نقیب قتل کیس، راؤ انور کے دست راست ڈی ایس پی قمر احمد کو جیل بھیجنے کا حکم

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک ) نقیب اللہ محسود سمیت 4 افراد کو جعلی پولیس مقابلے میں قتل کرنے کے مقدمے میں گرفتار ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ پولیس (ڈی ایس پی) قمر احمد شیخ کو انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔نقیب قتل کیس میں نامزد سابق سینئر سپرنٹنڈنٹ پولیس (ایس ایس پی) ملیر راؤ انوار احمد کے قریبی ساتھی اور ڈی ایس پی ملیر سٹی قمر احمد شیخ کو پولیس نے آج بھی خاص پروٹوکول کے ساتھ سندھ ہائیکورٹ میں واقع انسداد دہشتگردی عدالت پہنچایا۔ انسداد دہشت گردی عدالت کے منتظم جج نے سماعت کے بعد ڈی ایس پی قمر احمد شیخ کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیجنے کا حکم دے دیا۔اس مقدمے میں ڈی ایس پی قمر احمد سمیت 10 ملزمان گرفتار جبکہ سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار سمیت 14 پولیس افسران و اہلکار تاحال مفرور ہیں۔گرفتار ملزمان میں ڈی ایس پی قمر احمد شیخ کے علاوہ سب انسپکٹر محمد یاسین، اے ایس آئی اللہ یار کاکا، سپرد حسین، ہیڈ کانسٹیبلز محمد اقبال، خضر حیات، پولیس کانسٹیبلز غلام ناذک، عبدالعلی، ارشد علی اور شفیق احمد شامل ہیں۔دوسری جانب راؤ انوار، ان کے قریبی ساتھی سابق ایس ایچ او امان اللہ مروت اور شیخ محمد شعیب عرف شعیب شوٹر سمیت 14 ملزمان مقدمے میں مفرور ہیں۔

مزید : صفحہ آخر