بوریوالا‘ دوران ڈکیتی قتل ہونیوالے زمیندار کے ورثاء کا نعش سڑک پر رکھ کر احتجاج

بوریوالا‘ دوران ڈکیتی قتل ہونیوالے زمیندار کے ورثاء کا نعش سڑک پر رکھ کر ...

بورے والا(تحصیل رپورٹر)ڈکیتی میں جاں بحق ہونے والے زمیندارکے ورثاء کا نعش سڑک پر رکھ کرمیڈیکل آفیسر گگو منڈی اور پولیس کے خلاف احتجاج ، ڈوکوؤں کی جلد از جلد گرفتاری کا مطالبہ ، تفصیل کے مطابق گزشتہ شب 8 بجے کے قریب ڈکیتی کی واردات میں تین نامعلوم (بقیہ نمبر51صفحہ7پر )

ڈاکوؤں کے ہاتھوں جاں بحق ہونے والے محمد اشتیاق کے بھائی ضیاء احمد،عالمگیر ،عبدالرشید،رانا اللہ دتہ کی قیادت میں درجنوں مرد و خواتین نے لاری اڈااور پل نہر گؤشالہ پر سڑک کے درمیان مقتول کی نعش رکھ کر احتجاج کیا جس سے چاروں اطراف کی ٹریفک جام ہو گئی گاڑیوں کی لمبی لمبی لائنیں لگ گئیں مسافروں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑا احتجاج میں شامل افراد نے آر پی او ملتان ڈی پی او وہاڑی سے ملزمان کی گرفتاری کا مظاہرہ کیا ورثاء نے الزام عائد کیا کہ ڈاکٹروں کی جانب سے پوسٹمارٹم میں جان بوجھ کر تاخیری حربے استعمال کیے جا رہے ہیں جلد پوسٹمارٹم کیا جائے پولیس نے احتجاج میں شامل افراد سے مذاکرات کئے اور ڈاکٹر کو گھر سے سرکاری گاڑی میں بٹھا کر ہسپتال لایا گیا پولیس نے یقین دہانی کروائی کہ وہ دو دن میں ڈاکوؤں کو گرفتار کر لیں گے جس پر احتجاج پر امن طور پر ختم ہو گیا اور نعش کو دوبارہ تحصیل ہیڈ کوارٹر میں پوسٹمارٹم کیلئے پولیس کی نگرانی میں پہنچا دیا گیا تمام قانونی ضابطے پورے کرنے کے بعد نعش ورثاء کے حوالے کر دی گئی دریں اثناء مقتول کے ورثاء نے ٹی ایچ کیو ہسپتال کے ایمرجنسی پر موجود ڈاکٹروں کے خلاف بھی ایمرجنسی پر احتجاج کیا ورثاء نے الزام عائد کیا کہ تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے ڈیوٹی ڈاکٹرز نے اپنی ڈیوٹی سے غفلت کا مظاہرہ کرتے ہوئے گگو منڈی کے میڈیکل آفیسرکو پوسٹمارٹم کی اطلاع نہیں دی جس کی وجہ سے انہیں پریشانی اٹھانا پڑ رہی ہے تا ہم ہسپتال کی سیکورٹی اور پولیس نے معاملات پر قابو پا لیا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر