بریکوٹ ،میرے چار بے گناہ بچوں کو بے دردی سے قتل کیا گیا

بریکوٹ ،میرے چار بے گناہ بچوں کو بے دردی سے قتل کیا گیا

ؓبریکوٹ( نمائندہ پاکستان )میرے چار بے گناہ بچوں کو اندھا دھن فائرنگ کرکے قتل کر دیا لیکن کورٹ نے میرے غیر موجودگی میں میرے خلاف فیصلہ دیا ہے ،دونوں انکھوں سے نابینا غریب بوڑھا شخص ہوں اور میرے مخالف با اثر اور پیسوں والا ہے ۔مجھے انصاف کی حکومت میں انصاف نہیں مل رہا ،سپریم کورٹ کے ججوں کے خلاف احتساب کیا جائے ۔ان خیالات کا اظہار حافظ عبدالوہاب نے بریکوٹ پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ 2002میں میرے مخالفین جس کے خلاف میرا کورٹ میں فیصلہ چل رہاتھا میرے گھر کوثر کالونی زرخیلہ میں گھس کر اندھا دھن فائرنگ کرکے جس میں میری بہو بڑا بیٹا اور بھائی اور دوسرا بچہ قتل کر دیا جبکہ دوسری بہو کو زخمی کر دیا لیکن اس کے باوجود کورٹ نے میرے خلاف فیصلہ دے دیا اور پیسوں والے اور با اثر لوگوں کا ساتھ دیا میں چیف جسٹس اف پاکستان ، صوبائی حکومت ،مرکزی حکومت سمیت نیب سے اپیل کر تا ہوں کہ وہ مجھے انصاف دے اور ان ججوں کے خلاف جس نے مجھ سے نا انصافی کی ہے ،وہ لوگ جو دوسروں کا احتساب کرتے ہیں وہ خود اپنا احتساب کریں اگر مجھے انصاف نہیں ملا تو میں خود سوزی کرونگا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر /رائے