مردان قتل کیس میں مطلوب 30 سال روپوش رہنے والے کی ضمانت کنفرم

مردان قتل کیس میں مطلوب 30 سال روپوش رہنے والے کی ضمانت کنفرم

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس روح الامین خان نے مردان قتل کیس میں 30سال تک روپوش رہنے والے ملزم کوضمانت پررہا کرنے کے احکامات جاری کردئیے ہیں ملزم کی جانب سے شبیرحسین گگیانی ایڈوکیٹ نے درخواست کی پیروی کی اس موقعہ پرعدالت کو بتایاگیاکہ ملزم گل محمد ساکن مردان پرالزام ہے کہ اس نے 12مارچ1986ء کو فائرنگ کرکے افغان مہاجراصل خان کو قتل کردیاتھا اورتیس سال تک روپوش رہنے کے بعد اس کی گرفتاری عمل میں لائی گئی تاہم تین سال قبل ملزم کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ہے اوراتنے عرصے میں ملزم کے خلاف مقدمے میں کوئی گواہ پیش نہیں کیاجاسکاہے اوراس طرح ملزم ناکردہ جرم کی سزاکاٹ رہا ہے لہذااسے ضمانت پررہا کیاجائے عدالت نے دوطرفہ دلائل مکمل ہونے پرملزم کی درخواست ضمانت منظورکرلی

مزید : پشاورصفحہ آخر /رائے