خیبر ایجنسی ،فاٹا سیکرٹریٹ فنڈز نہ ہونے سے طلباء ٹیسٹ سے محروم

خیبر ایجنسی ،فاٹا سیکرٹریٹ فنڈز نہ ہونے سے طلباء ٹیسٹ سے محروم

خیبر ایجنسی (نمائندہ پاکستان )قبائلی طلباء ایٹا ٹیسٹ دینے سے بھی محروم ہو گئے فاٹاسیکرٹیریٹ کے ساتھ فنڈ نہ ہونے سے قبائلی طلباء اس سال ایٹا ٹیسٹ میں حصہ نہیں لے سکے ہر سال خیبر پختونخوا طلباء کی طرح قبائلی طلبا سے ایٹا ٹیسٹ لینے کے بعد سے پچاس ذہین طلباء کو منتخب کرکے خیبر پختونخوا کے مختلف بہترین تعلیمی اداروں میں پڑھنے کیلئے بھیجتے تھے ،ایجوکیشن ذرائع کے مطابق ہر سال قبائلی طلباء سمیت خیبر پختونخوا طلباء سے ایٹاٹیسٹ لیا جاتا ہیں جس میں زہین طلباء کو خیبر پختونخوا کے بہترین تعلیم اداروں میں داخل کئے جا تے ہیں اس خیبر پختونخوا کے طلباء سے ٹیسٹ لیا گیا لیکن قبائلی طلباء کو اس سال ٹیسٹ دینے محروم کر دیا گیا اور بہترین تعلیمی اداروں میں بھی پڑھنے سے بھی محروم ہو گئے ذرائع کے مطابق کہ ایٹاٹیسٹ میں پچا س طلباء اور منتخب کئے جا تے ہیں جس میں 32 طلباء اور18طالبات شامل ہوتے ہیں بلکہ جس ایجنسی کی آبادی زیا دہ ہو تی ہیں اس سے زیادہ طلباء منتخب کئے جا تے ہیں لیکن اس سال فاٹا سیکر ٹریٹ نے محکمہ ایجوکیشن کو صاف بتا دیا کہ انکے ساتھ فنڈ نہیں ہیں اس لئے قبائلی طلباء ایٹا ٹیسٹ میں حصہ نہیں لے گے محکمہ ایجوکیشن ذرائع کے مطابق کہ ڈائر یکٹر ایجوکیشن نے اس سلسلے میں گورنر کو خط درخواست بھیج دی ہیں تا کہ فنڈ کا بندوبست کرکے طلباء کو ایٹا ٹیسٹ میں شامل کر سکے اس سلسلے میں قبائلی طلباء نے مطالبہ کیا کہ ایٹا ٹیسٹ میں قبائلی طلباء کا کوٹہ بہت کم ہیں اسلئے کو ٹہ کو زیا دہ کیا جائے اور طالبات کیلئے علیحدہ کو ٹہ مقرر کیا جا ئے کیونکہ فاٹا کی آبادی بہت زیا دہ ہیں اور ایٹا ٹیسٹ میں کوٹہ بہت کم ہیں

مزید : پشاورصفحہ آخر /رائے