سابق پی آئی او راؤ تحسین نے او ایس ڈی بنائے جانے کو چیلنج کردیا، سماعت پیر کو ہوگی

سابق پی آئی او راؤ تحسین نے او ایس ڈی بنائے جانے کو چیلنج کردیا، سماعت پیر کو ...

اسلام آباد (این این آئی) سابق پی آئی او راؤ تحسین نے ڈان لیکس کے معاملے پر خود کو او ایس ڈی بنائے جانے کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کردیا ہے ۔راؤ تحسین کی جانب سے بیرسٹر مسرور شاہ نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں رٹ پٹیشن دائر کی ہے جس کی سماعت پیر کو ہوگی ۔ دائر کی گئی پٹیشن میں کہا گیا ہے کہ قانون میں تین ماہ سے زائد او ایس ڈی بنانے کی گنجائش نہیں ہے۔ سابق وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان نے کہہ دیا ہے ڈان لیکس رپورٹ میں راؤ تحسین کا نام نہیں ہے ان کا اس سے کوئی تعلق ہے نہ وہ اس اجلاس میں تھے ۔ راؤ تحسین کو قربانی کا بکرا بنایا گیا ہے۔ بیرسٹر مسرور نے کہا کہ ڈان لیکس رپورٹ کی کاپی فراہم کی جائے جس کی بنیاد پر راؤ تحسین کو غدار کہا گیا ۔ انہوں نے سانحہ ماڈل ٹاؤن رپورٹ عام کرنے کے لاہور ہائیکورٹ کے فیصلہ کا حوالہ بھی دیا ہے ۔ اگر آئین معلومات تک رسائی کا حق دیتا ہے تو کوئی قانون اسے سلب نہیں کرسکتا۔ میڈیا نے ڈان لیکس رپورٹ کو راؤ تحسین کے خلاف استعمال کیا۔ آرٹیکل 10 اے کے تحت فیئر ٹرائل اور آرٹیکل 19 اے کے تحت معلومات تک رسائی راؤ تحسین کا حق ہے ۔انہوں نے کہا کہ راؤ تحسین کو ڈان لیکس کی بنیاد پر بطور سزا او ایس ڈی بنایا گیا ہے۔ حج کرپشن کیس میں سپریم کورٹ یہ قرار دے چکی کہ او ایس ڈی بنایا جانا سزا ہے جسے ہائی کورٹ میں چیلنج کیا جا سکتا ہے۔

چیلنج

مزید : پشاورصفحہ آخر /رائے