ملک کا مستقبل نوجوانوں کے ہاتھوں میں ہے : سپیکر قومی اسمبلی

ملک کا مستقبل نوجوانوں کے ہاتھوں میں ہے : سپیکر قومی اسمبلی

اسلا م آباد(سٹاف رپورٹر) سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے کہا ہے کہ ملک کا مستقبل نوجوانوں کے ہاتھوں میں ہے اور ہماری نوجوان نسل میں ملک کو درپیش مسائل کا مقابلہ کرنے اور ملک کے مستقبل کو تابناک بنانے کی تمام ترصلاحیتیں موجود ہیں ۔انہوں نے ان خیالات کا اظہارکینٹرڈ ڈ کالج برائے خواتین لاہور کی پرنسپل ڈاکٹر رخسانہ ڈیوڈ کی سر براہی میں ملنے والے طالبات کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا جنہوں نے جمعہ کے روز پارلیمنٹ ہاؤس میں سپیکر سے ملاقات کی۔سپیکر نے کہا کہ کسی بھی ملک کی تعمیر و تر قی اور خوشحالی کے لیے تعلیم کا ہوناناگزیر ہے اور صر ف وہی اقوام تر قی کرتی ہیں جن کی تعلیم اولین تر جیح ہوتی ہے۔ سپیکر نے طالبات کو ملک کی یونیورسٹیوں میں پارلیمانی مطالعہ کے مضامین کو متعارف کرانے کے اپنے اقدام سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ نوجوان نسل کے ذہنوں میں پاکستان میں پارلیمانی جمہوریت، تاریخ اورجدوجہد اور اہمیت کو اجاگر کرنے اور جمہوری اقدارکو فروغ دینے کا یہ بہترین ذریعہ ہے ۔ سردار ایاز صادق نے وفد کو پارلیمنٹ کی طرف سے اٹھائے گئے ان اقدامات سے بھی آگا ہ کیا جن سے پارلیمنٹ کے کام کے طریقہ کار کو مزید فعال بنانا ہے ۔انہوں نے طالبات کو پپس کی طر ف سے پارلیمنٹ کے حوالے سے مختلف کورسز کے اجراء، قومی اسمبلی میں ریسرچ یونٹ ، لجسیٹیو ڈرافٹنگ کونسل ، پائیدار تر قی کے اہداف کے حصول کے لیے قومی اسمبلی میں پائیدار تر قی کے اہداف کے قیام کے اقدامات سے بھی آگاہ کیا ۔انہوں نے وفد کو غیر جماعتی خواتین پارلیمانی کاکس کے کام کے طر یقہ کار سے بھی آگاہ کیا جو خواتین کے حقوق اورصنفی مساوات کے لیے ہونے والی قانون سازی میں اہم کردار ادا کر رہا ہے ۔ کینٹرڈ کالج برائے خواتین کی پرنسپل نے سپیکر کی پارلیمانی اور جمہوری اقتدار کو فروغ اور ملک کے مختلف کالجوں اور یونیورسٹیوں میں پارلیمانی مطالعہ کے مضامین کو متعارف کرانے کے اقدامات کو سر اہا ۔بعدازاں قومی اسمبلی آف پاکستان اور پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف پارلیمنٹری سر وس پپس نے کینٹرڈ کالج برائے خواتین کے ساتھ علیحدہ علیحدہ مفاہمتی یاداشتوں پر دستخط کئے ان یاداشتوں میں تمام اداروں نے انسانی وسائل کی تر قی اور پارلیمانی سٹڈیز کے مضامین کو متعارف کرانے کے لیے ایک دوسر ے کے ساتھ تعاون کرنے کے عزم کا اظہار کیا ۔مفاہمتی یاداشتوں کے مطابق قومی اسمبلی اور پپس نے کینٹرڈ کالج برائے خواتین کی طالبات کو سوشل سائنسز ،پولیٹیکل سائنسز قانون اور پارلیمانی مطالعہ کے مضامین میں انٹرشپ کی بھی پیش کش کی یہ یاداشتیں تین سال تک قابل عمل ہو گا اور باہمی اتفاق رائے سے اس کی مدت میں ہر سال اضافہ کیا جا سکے گا ۔

مزید : کراچی صفحہ اول