مرغیوں کے گوشت میں کوئی مسئلہ نہیں ، سپریم کورٹ میں رپورٹ پیش

مرغیوں کے گوشت میں کوئی مسئلہ نہیں ، سپریم کورٹ میں رپورٹ پیش
مرغیوں کے گوشت میں کوئی مسئلہ نہیں ، سپریم کورٹ میں رپورٹ پیش

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) سپریم کورٹ آف پاکستان میں مرغیوں کو دی جانے والی خوراک سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران یہ بات سامنے آئی ہے کہ برائلر مرغیوں کے گوشت میں کوئی مسئلہ نہیں ہے۔

مرغیوں کو دی جانے والی خوراک سے متعلق کیس کی سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں سماعت کے دوران عدالتی معاون فیصل مسعودنے رپورٹ پیش کی۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مرغی کے گوشت کے نمونوں میں جراثیم نہیں پائے گئے ، مرغیوں سے متعلق جو مسائل آئے ہیں وہ گوشت سے متعلقہ نہیں ہیں۔

برائلر مرغیوں نے پوری دنیا کے انسانوں کا مستقبل داﺅ پر لگادیا، ایسی خوفناک خبر آگئی کہ جان کر آپ کبھی مرغی کو ہاتھ نہ لگائیں گے

چیف جسٹس نے اپنے ریمارکس میں گوشت میں خرابی نہ ہونے پر خوشی کا اظہار کیا اور کہا کہ بڑی خوش آئندبات ہے کہ گوشت میں کوئی خرابی نہیں ہے اگر صفائی ستھرائی کاخیال رکھاجائے تو صورتحال پر قابو پایا جا سکتا ہے۔ ڈی جی فوڈپنجاب نورالامین مینگل نے عدالت کو یقین دہانی کرائی کہ روزانہ کی بنیاد پر پولٹری فارمز کا وزٹ کریں گے اور ایک ماہ میں ایس او پی بنا کر اسٹاف کو ٹریننگ دیں گے۔

چیف جسٹس نے حکم دیا کہ جب تک معاملہ عدالت میں ہے فیصل مسعودکوٹرانسفرنہ کیاجائے، عدالت نے کیس کی مزید سماعت 9 مارچ تک ملتوی کردی ۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور /اہم خبریں /قومی