ہسپتال میں آدمی کے دماغ کا آپریشن، سرجن دماغ کھول کر 2 گھنٹے تک مسئلہ ڈھونڈتے رہے مگر پھر ایسا انکشاف سامنے آگیا کہ ہر کسی کے ہوش اُڑگئے، پورے ہسپتال میں کھلبلی مچ گئی کیونکہ۔۔۔ ایسا کام ہوگیا جس کی میڈیکل سائنس کی تاریخ میں کوئی مثال نہیں ملتی

ہسپتال میں آدمی کے دماغ کا آپریشن، سرجن دماغ کھول کر 2 گھنٹے تک مسئلہ ڈھونڈتے ...
ہسپتال میں آدمی کے دماغ کا آپریشن، سرجن دماغ کھول کر 2 گھنٹے تک مسئلہ ڈھونڈتے رہے مگر پھر ایسا انکشاف سامنے آگیا کہ ہر کسی کے ہوش اُڑگئے، پورے ہسپتال میں کھلبلی مچ گئی کیونکہ۔۔۔ ایسا کام ہوگیا جس کی میڈیکل سائنس کی تاریخ میں کوئی مثال نہیں ملتی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نیروبی(مانیٹرنگ ڈیسک) کینیا میں ایک شخص کے دماغ میں ایک جگہ خون منجمد ہو گیا جس پر اسے ہسپتال لایا گیا اور ڈاکٹروں نے اس کے دماغ کا آپریشن کرنے کے لیے دن مقرر کر دیا۔ مقررہ دن پر عملہ اسے آپریشن تھیٹر لے گیا جہاں 4سرجن اس کا دماغ کھول کردو گھنٹے تک خون منجمد ہونے کی جگہ تلاش کرتے رہے اور پھر ایسا انکشاف ہوا کہ پورے ہسپتال میں کھلبلی مچ گئی۔سکائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق درحقیقت یہ وہ مریض تھا ہی نہیں جس کے دماغ میں شریان کا مسئلہ تھا اور خون منجمد تھا۔ عملہ کسی اور بے ہوش شخص کو اٹھا لایا اور ڈاکٹروں نے بھی تحقیق کیے بغیر اس کی کھوپڑی کھول ڈالی۔

رپورٹ کے مطابق طبی تاریخ کا یہ انوکھا ترین واقعہ کینیا کے دارالحکومت نیروبی کے کینیاٹا نیشنل ہسپتال میں پیش آیا۔ دونوں مریض وارڈ 5اے میں داخل کیے گئے تھے ۔ جس مریض کا دماغ ڈاکٹروں نے کھول ڈالا تھا اسے سر میں چوٹ آنے سے سوجن آگئی تھی اور اس کا علاج محض ادویات کے ذریعے ہونا تھا۔ واقعے کی تحقیقات کے بعد ان چاروں سرجنز کو نوکری سے فارغ کر دیا گیا ہے۔ تحقیقاتی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ڈاکٹروں کو غلط مریض آپریشن تھیٹر میں لائے جانے کا احساس اس وقت ہوا جب وہ دو گھنٹے کی کوشش کے باوجود اس کے دماغ میں منجمد خون تلاش نہ کرسکے۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

مزید : ڈیلی بائیٹس