380 کلو وزنی آدمی جس کی زندگی پر ٹی وی شو بنایا جارہا تھا ہسپتال میں انتقال کرگیا، لیکن جاتے جاتے اس کے آخری الفاظ کیا تھے؟ جان کر آپ کی بھی آنکھیں بھر آئیں گی

380 کلو وزنی آدمی جس کی زندگی پر ٹی وی شو بنایا جارہا تھا ہسپتال میں انتقال ...
380 کلو وزنی آدمی جس کی زندگی پر ٹی وی شو بنایا جارہا تھا ہسپتال میں انتقال کرگیا، لیکن جاتے جاتے اس کے آخری الفاظ کیا تھے؟ جان کر آپ کی بھی آنکھیں بھر آئیں گی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ میں 380کلوگرام وزنی شخص، جس کی زندگی پر ٹی وی شو بنایا جا رہا تھا، گزشتہ روز ہسپتال میں انتقال کر گیا لیکن مرنے سے پہلے ایسی بات کہہ گیا کہ سن کر ہر کسی کی آنکھیں نم ہو جائیں۔ انڈی 100کی رپورٹ کے مطابق 41سالہ رابرٹ بوچل نامی یہ شخص امریکی ریاست نیوجرسی کے شہر فورکڈ ریور کا رہنے والا تھا۔ اسے نومبر 2017ءمیں موٹاپے کے باعث ہارٹ اٹیک آیا تھا۔مرنے سے کچھ ہی دیرپہلے اس نے اپنی منگیتر کیتھرین لیمنسکی سے کہا کہ ”مجھے نہیں لگتا کہ اب مزید میں زندہ رہ پاﺅں گا۔“یہ فقرہ بولنے کے کچھ دیر بعد ہی اس کی موت واقع ہو گئی۔

رپورٹ کے مطابق ہسپتال میں رابرٹ کا موٹاپا کم کرنے کے لیے اس کی سرجری کی جا رہی تھی اور ساتھ ہی ایک ٹی وی شو تیار کیا جا رہا تھا۔ اس شو کا نام ’مائی 600پاﺅنڈ لائف‘ تھا جو ٹی ایل سی نیٹ ورک بنا رہا تھا۔ کیتھرین کا کہنا تھا کہ ”گزشتہ پانچ ماہ سے رابرٹ کا وزن کم کرنے کے لیے ڈاکٹر جدوجہد کر رہے تھے اور اب تک وہ اس میں 154کلوگرام کمی لانے میں کامیاب ہو گئے تھے لیکن بار ہا سرجری ہونے کے باعث رابرٹ شدید تکلیف میں مبتلا تھا، اس نے موت سے کچھ دیر پہلے ہی مجھے کہا تھا کہ اب اس سے یہ تکلیف برداشت نہیں ہو پا رہی۔ اس کی موت سے میں نے اپنا بہترین دوست کھو دیا ہے جس کے ساتھ میں اپنی باقی تمام زندگی گزارنا چاہتی تھی۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس