’میں اپنی سم ٹھیک کروانے موبائل کمپنی کی فرنچائز پر گئی، دکان پر موجود ملازم نے میرے فون سے۔۔۔‘ نوجوان لڑکی کے ساتھ ایسا شرمناک ترین کام ہوگیا کہ جان کر لڑکیوں کو موبائل کمپنیوں سے ہی ڈر لگنے لگ جائے

’میں اپنی سم ٹھیک کروانے موبائل کمپنی کی فرنچائز پر گئی، دکان پر موجود ملازم ...
’میں اپنی سم ٹھیک کروانے موبائل کمپنی کی فرنچائز پر گئی، دکان پر موجود ملازم نے میرے فون سے۔۔۔‘ نوجوان لڑکی کے ساتھ ایسا شرمناک ترین کام ہوگیا کہ جان کر لڑکیوں کو موبائل کمپنیوں سے ہی ڈر لگنے لگ جائے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ میں ایک لڑکی موبائل کمپنی کی فرنچائز پر اپنی سِم ٹھیک کروانے گئی لیکن وہاں موجود ملازم نے اس کے فون سے ایسا انتہائی ذاتی نوعیت کا ڈیٹا چوری کر لیا کہ سن کر ہی لڑکیاں موبائل کمپنیوں سے خوف کھانے لگیں گی۔ ویب سائٹ worldwideweirdnews.com کی رپورٹ کے مطابق امریکی ریاست فلوریڈا کے شہر پائینلاس پارک کی 24سالہ کیلی ہائی ٹاور کے موبائل میں اس کی فحش ویڈیو موجود تھی جو فرنچائز کے26سالہ رابیرٹو ارامیس راموس نامی ملازم نے خود کو ای میل کر لی۔ اس ویڈیو میں کیلی کسی مرد کے ساتھ قابل اعتراض حالت میں ہوتی ہے۔

رپورٹ کے مطابق کیلی نے فون واپس ملنے پر ’ای میل ایڈریس‘ چیک کیا تو اس سے وہ ویڈیو ایک نامعلوم ایڈریس پر بھیجی گئی تھی۔ چنانچہ اس نے پولیس کو اس کی رپورٹ کر دی۔ جب پولیس نے تفتیش کی تو پتا چلا کہ جسے ویڈیو بھیجی گئی تھی وہ وہی فرنچائز کا ملازم تھا جسے کیلی نے فون دیا تھا۔ پولیس نے ملازم کو گرفتار کرکے عدالت میں پیش کر دیا۔جج نے 18ماہ زیرنگرانی رکھے جانے کی سزا دیتے ہوئے جیل بھیج دیا ہے اور اس کی ضمانت کی رقم 10ہزار ڈالر (تقریباً10لاکھ روپے) طے کر دی ہے، جس ادائیگی کرکے وہ رہا ہو سکتا ہے۔ اس کے علاوہ اسے کیلی کو 200ڈالر (تقریباً 22ہزار روپے) ہرجانہ ادا کرنے کا بھی حکم دیا گیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /بین الاقوامی