کوہاٹ 185کنال پر تعمیر ہونیوالا ریسیکیو1122کی اکیڈمی خیبر شفٹ کرنے کا انکشاف

کوہاٹ 185کنال پر تعمیر ہونیوالا ریسیکیو1122کی اکیڈمی خیبر شفٹ کرنے کا انکشاف

  



کوھاٹ (بیورو رپورٹ) 185 کنال پر تعمیر ہونے والی ریسکیو 1122 کی ٹریننگ اکیڈمی کو کوھاٹ سے ضلع خیبر ایجنسی شفٹ کرنے کا انکشاف‘ اکیڈمی کی تعمیر سے سینکڑوں نوجوانوں کو روزگار ملنے کی امید دم توڑ گئی تحریک انصاف کے منتخب ممبران اسمبلی کے لیے کھلا چیلنج‘ تفصیلات کے مطابق ریسکیو 1122 کے ٹریننگ سینٹر کے لیے موضع گنڈیالی کے مقام پر 185 کنال زمین ریسکیو 1122 سروسز کوھاٹ کے نام پر ٹرانسفر کر دی گئی تھی یہ ٹریننگ سنٹر پختونخوا بھر میں ریسکیو اہلکاروں کی ٹریننگ کے لیے قائم کیا جا رہا تھا جس میں ایک ہی وقت میں 600 اہلکاروں کو تربیت دینے کی گنجائش تھی اس اکیڈمی میں ریسکیو اہلکاروں کو آگ بجھانے‘ آگ پر قابو پانے‘ کسی بھی حادثے کی صورت میں موقع پر طبعی امداد کی فراہمی ہنگامی صورت حال سے نمٹنے کی ٹریننگ سمیت عمارت کے گرنے کی صورت میں ملبے تلے دبے افراد کو نکالنے اور ڈوبتے ہوئے افراد کو بچانے کی ٹریننگ دی جاتی تھی مگر افسوس کہ باخبر ذرائع کے مطابق صوبائی حکومت نے کابینہ کے اجلاس میں اس ٹریننگ کو گنڈیالی یعنی کوھاٹ سے ضلع خیبر کے علاقے شاہ کس منتقل کرنے کی منظوری دے دی ہے جو کہ کوھاٹ کی عوام کے ساتھ سخت زیادتی اور کوھاٹ کی ترقی پر ضرب لگانے کے برابر ہے واضح رہے اس اکیڈمی کی تعمیر کے لیے 1 کروڑ فنڈ بھی ابتدائی طور پر مختص کیا جا چکا ہے عوامی حلقوں نے کوھاٹ سے ضلع خیبر ریسکیو اکیڈمی کی شفٹنگ کو حیران کن قرار دیتے ہوئے کہا کہ صوبائی کابینہ میں کوھاٹ کی نمائندگی کے باوجود کوھاٹ سے اس کا حق چھیننا باعث حیرت ہے واضح رہے اس اکیڈمی کے قیام سے کوھاٹ کے سینکڑوں نوجوانوں کو جہاں روزگار کی سہولت دستیاب ہوتی وہیں موضع گنڈیالی کی عوام کو بھی روزگار کے مواقع فراہم ہوتے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر