منافع خوربے لگام،88پرائس مجسٹریٹ صرف32ہزارکے جرمانے کر سکے

منافع خوربے لگام،88پرائس مجسٹریٹ صرف32ہزارکے جرمانے کر سکے

  



لاہور(جنرل رپورٹر)شہر بھر میں منافع خورمافیا کی سرگرمیاں تیز، پرائس کنٹرول کمیٹیاں غائب، وزیر اعظم کے دعوے بھی ہوا ہوگئے۔ سرکاری نرخنامے کیمطابق سبزیوں کی فروخت ممکن نہ ہوسکی، آلو50سے60، لہسن 400 سے 450 روپے کلو میں فروخت، ادرک 450سے 500، ہری مرچ 250روپے کلو میں فروخت ہورہی ہے۔ شہری ناجائز منافع خور مافیا کے خلاف پھٹ پڑے۔کہتے ہیں پرائس کنٹرول کمیٹیاں مارکیٹوں سے غائب ہیں،ناجائز منافع خور صارفین کو لوٹ رہے ہیں۔شہریوں نے منافع خورمافیا کو لگام ڈالنے کا مطالبہ کیا ہے۔دوسر ی جانب پرائس کنٹرول مجسٹریٹس گراں فروشوں کیسامنے بے بس نظر آئے،،کمیٹی ممبران نے دفاترمیں بیٹھنامعمول بنالیا، شہرکی متعددمارکیٹس میں سرکاری نرخ نظر انداز ہورہے ہیں۔ ضلعی انتظامیہ کی کارروائیاں اونٹ کے منہ میں زیرے کے برابر ہیں۔ گزشتہ24گھنٹوں میں شہر بھر میں 88مجسٹریٹس صرف32 ہزار کے جرمانے کرسکے۔ خیال رہے وزیر اعظم عمران خان نے وفاقی کابینہ کے اجلاس میں شہریوں کی مشکلات کم کرنے کیلئے سبسڈی کا بھی اعلان کیا تھا ساتھ ہی ساتھ ملک بھر میں موجود پرائس کنٹرول کمیٹیوں کو فعال بنانے کی ہدایت بھی کی تھی۔

جرمانے

مزید : میٹروپولیٹن 1