جامعہ تعلیم القرآن کے زیر اہتمام مسجد ابراہیم میں تقریب کا انعقاد

        جامعہ تعلیم القرآن کے زیر اہتمام مسجد ابراہیم میں تقریب کا انعقاد

  



کراچی(پ ر) جامعہ تعلیم القرآن والسنہ منظور کالونی کے زیر اہتمام جامع مسجد ابراہیم منظور کالونی میں تقریب، حفظ قرآن کریم و ختم بخاری شریف و دستار بندی حفاظ کرام فضلا اور مفتیان عظام اور دوپٹہ پوشی فاضلات منعقد ہوئی، عالم اسلام کے مایہ نازقاری احمد میاں تھانوی نے عظمت قرآن اور مدارس کے کردار پر خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ مدارس اسلام کی روح ہیں جب تک دنیا موجود ہے مدارس بھی رہیں گے، مدارس عربیہ کی حفاظت اللہ پاک فرمارہے ہیں، دنیا جتنا چاہے پروپیگنڈا کرلے مدارس کو کوئی نقصان نہیں پہنچا سکتا، مدارس دنیا کی سب سے بڑی این جی اوز ہیں، یہاں سے روشنی کی کرنیں پھوٹی ہیں۔ انھوں نے کہا کہ قرآن پاک اللہ تعالی کا زندہ و جاوید معجزہ ہے، اس کا پڑھنا، دیکھنا اور سننا باعث ثواب ہے، بروز قیامت یہ ہماری شفاعت کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ والدین اپنے بچوں کو لازمی قرآن پاک کی تعلیم دلوائیں۔ انہوں نے فارغ ہونے والے طلبا اور والدین کو مبارک باد پیش کی اور زور دیا کہ وہ قرآن پاک پر خلوص نیت سے عمل کریں۔ انہوں نے کہا کہ مدارس اسلامی معاشرے کی تشکیل میں اہم کردار ادا کرتے ہیں، ڈاکٹر مولانا محمد عادل خان نے درس نظامی مکمل کرنے والے طلبا کو بخاری شریف کی آخری حدیث کا درس دیا، جامعہ ھذا کے بانی مولانا قاری شبیر احمد عثمانی کے دیرنہ ساتھی مولانا سید شفیع الرحمن نے کہا کہ آج قاری شبیر احمد عثمانی کی یاد سب کو آرہی ہے، وہ اتحاد امت کے داعی تھے، انھوں نے ہمیشہ فرقہ واریت کی نفی اور آپس میں جڑے رہنے کا درس دیا، ان کی ذات پر کئی کتابیں لکھی جاسکتی ہیں۔ جامعہ تعلیم القرآن والسنہ دین کے فروغ میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔ مولانا محمد طیب عثمانی نے تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا اور فارغ ہونے والے طلبا و طالبات کو مبارکباد پیش کی، ناظم اعلیٰ قاری محمد اشرف نے بھی علاقہ عمائدین اور طلبا کو پروگرام میں شرکت کرنے پر مبارکباد باد اور ان کا شکریہ ادا کیا۔ تقریب میں قرآن پاک مکمل کرنے والے 28 طلبا، درس نظامی مکمل کرنے والے 10 طلباء، تخصص فی الاسلامی مکمل کرنے والے 4 طلبا دراسات دینیہ مکمل کرنے والی 4 طالبات میں اسناد سرٹیفکیٹ انعامات تقسیم کیے گئے، تقریب میں قاری عبدالقیوم نعمانی، قاری اللہ داد سمیت دیگر علماء کرام طلباء علاقہ معززین اور زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر