بھارت چاہتا تھا مسئلہ کشمیر چھپ جائے، پاکستان نے عالمی سطح پر اجا گر کیا، سید فخر امام

بھارت چاہتا تھا مسئلہ کشمیر چھپ جائے، پاکستان نے عالمی سطح پر اجا گر کیا، ...

  



اسلام آباد(آئی این پی)پارلیمانی کشمیر کمیٹی کے چیئرمین سید فخر امام نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں دو سو سے زائد دنوں سے لاک ڈاؤن جاری ہے،پاکستان نے تمام عالمی فورمز پر مسئلہ کشمیر کو اجاگر کیا، عالمی پارلیمان اور ایوانوں میں کشمیر پر بحث ہوئی،بھارت چاہتا ہے کہ یہ بات چھپ جائے لیکن وہ بے نقاب ہورہا ہے، آج بھارت میں نفرت کا ماحول پیدا کیا جارہا ہے،بھارت میں اقلیتوں کے ساتھ ناروا سلوک کیا جارہا ہے۔عالمی میڈیا نے مودی کو بے نقاب کیا ہے، ڈونلڈ ٹرمپ نے ثالثی کی بات کی مگر بھارت نہ مانا۔ پیر کو پارلیمانی کشمیر کمیٹی کا (ان کیمرا)جلاس چیئرمین سید فخر امام کی صدارت میں ہوا، اجلاس میں او آئی سی کے وفد نے بھی شرکت کی۔اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے چیئرمین کمیٹی سید فخر امام نے بتایا کہ آج پارلیمانی کشمیر کمیٹی کی اہم میٹنگ ہوئی ہے۔ او آئی سی کے خصوصی نمائندے نے وفد کے ہمراہ اجلاس میں شرکت کی۔ او آئی سی وفد کو کشمیر کی صورتحال پر بریفنگ دی۔ پانچ اگست کے بعد یہ ثابت ہوا کہ کشمیر عالمی مسئلہ ہے۔ فخر امام نے کہا کہ آج بھارت میں نفرت کا ماحول پیدا کیا جارہا ہے۔بھارت میں اقلیتوں کے ساتھ ناروا سلوک کیا جارہا ہے۔عالمی میڈیا نے مودی کو بے نقاب کیا ہے۔ سید فخرامام نے کہا کہ پاکستان نے تمام عالمی فورمز پر مسئلہ کشمیر کو اجاگر کیا۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے ثالثی کی بات کی مگر بھارت نہ مانا۔ جرمن چانسلر نے بھارت کے دورہ کے موقع پر کشمیر پربات کی۔ عالمی پارلیمان اور ایوانوں میں کشمیر پر بحث ہوئی۔ بھارت چاہتا ہے کہ یہ بات چھپ جائے لیکن وہ بے نقاب ہورہا ہے۔ یو این سیکرٹری جنرل نے اپنے دورہ پاکستان میں کشمیر پر کھل کربات کی۔ اب بھارت گھبرارہا ہے۔

فخر امام

مزید : صفحہ آخر