اورنج ٹرین ٹرانسمیشن لائن بچھا نے سے روکنے کے حکم امتناعی میں 6مارچ تک توسیع

    اورنج ٹرین ٹرانسمیشن لائن بچھا نے سے روکنے کے حکم امتناعی میں 6مارچ تک ...

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹر جسٹس مامون رشید شیخ نے میٹرواورنج ٹرین منصوبے کے لئے بجلی کی سپلائی لائن بچھانے کے نام پر درختوں کی کٹائی کے خلاف کیس میں ٹرانسمیشن لائن بچھانے سے روکنے کے اپنے عبوری حکم میں 6مارچ تک توسیع کردی۔دوران سماعت چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ افسرقوانین کو جانتے ہیں، پھرکمروں میں بیٹھ کردرخت کاٹنے کاحکم دے کر قانون کونظراندازکس بنیاد پرکرتے ہیں؟ڈی جی پی ایچ کے پیش نہ ہونے پرعدالت نے سخت اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ پیش نہ ہونے پرکیوں نہ ڈی جی پی ایچ اے کے وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے جائیں، محکمہ ماحولیات کے وکیل نے عدالت کوبتایا کہ اورنج ٹرین منصوبے کے لئے بلااجازت درخت کاٹنے پرلیسکو کوشوکاز نوٹس بھیج دیا ہے،درختوں کی کٹائی کے لئے قانونی طریقہ کار نظر انداز کرنے پرمحکمہ جنگلات اور پی ایچ اے کوبھی شوکاز نوٹس بھجوا دیا گیاہے،عدالت نے تینوں محکموں کو شوکاز نوٹس کا جواب دینے کے لئے ڈی جی ماحولیات کے پاس پیش ہونے کا حکم دیتے ہوئے مزید سماعت 6مارچ تک ملتوی کردی،درخواست گزار جوڈیشل ایکٹو ازم پینل کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ اورنج ٹرین کوبجلی سپلائی کرنے کے لئے لائن بچھائی جارہی ہے جس کے لئے نہر کے اردگرد سے غیرقانونی طورپردرخت کاٹ دئیے گئے ہیں۔

اورنج ٹرین

مزید : صفحہ آخر