گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس کا الگ صوبے کیلئے تحریک چلانے کا اعلان

        گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس کا الگ صوبے کیلئے تحریک چلانے کا اعلان

  



ملتان (سپیشل رپورٹر) گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس نے صوبہ جنوبی پنجاب کے قیام کے لئے احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان کردیا ہے ملتان میں 12مارچ کو پہلا کنونشن منعقد ہو گا جس کے لئے تیاریاں شروع کر دی گئی ہیں اور مختلف کمیٹیاں بھی تشکیل دے دی گئی ہیں صوبے کا نام کوئی رکھ دیں ہمیں کوئی اعتراض نہیں لیکن صوبہ بنادیں، ہمارا کوئی سیاسی ایجنڈا نہیں ہے خیالات کا گورنمنٹ گرینڈ الائنس کے رہنماؤں خالد جاوید سنگھیڑا،مختار احمد راٹھور، مہر اشرف ساقی،(بقیہ نمبر13صفحہ12پر)

ملک الطاف احمد، رخسانہ انور، مظہر نواز خان بادوزئی، کریم نواز خان، نیاز احمد ڈھلوں، دلاور عباس صدیقی، اقبال طائر، میاں نعیم ارشد، محمد الیاس، سرور قریشی، راؤ محمد جمیل، محمد زبیر،محمد عقیل، ندیم خان، سعید مجاہد، عبد الرزاق بلوچ، امان اللہ مینس، عابد فرید بزدار، مہتاب قریشی، قاسم بھٹہ، شہزاد بٹ،صغیر عباس، محمد طیب، احمد خان، ملک انور، ملک احمد نواز،رانا الطاف حسین، ودیگر نے پریس کلب میں پرہجوم پریس کانفرنس کے دوران اعلان کیا خالد جاوید سنگھیڑا نے مزید کہا کہ موجودہ حکومت نہ صرف الگ صوبہ کے قیام کے وعدے سے منحرف ہو گئی ہے سو دنوں میں الگ صوبے کے قیام کا علان کیا گیا نہ ہی سب سول سیکریٹریٹ بنایا گیا اور نہ ہی آج تک صوبے کے قیام کا اعلان کیا گیا ہے جس کی وجہ سے خطہ کی محرومیوں اور پسماندگی میں مزید اضافہ ہو رہا ہے یہاں تک کہ سفید پوش طبقہ ملازمین کے مسائل میں بھی اضافہ کردیا ہے جو بڑھتی ہوئی مہنگائی، بجلی، سوئی گیس اور پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے شدید پریشانی سے دوچار ہیں رہی سہی کسر سبزیوں، پھلوں اور دیگر اشیائے ضروریہ کی آسمان کی بلندیوں پر پہنچی قیمتوں نے پوری کردی ہے لیکن نہ تنخواہوں میں اضافہ کیا گیا اور نہ ہی محرومیوں کا خاتمہ کیا گیاافسوسناک صورتحال یہ ہے کہ سندھ، بلوچستان اور کے پی کے ملازمین کی تنخواہیں بڑھ گئی ہیں مگر پنجاب کے ملازمین کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کیاجارہا ہے ملتان سمیت جنو بی پنجاب میں تعلیم، صحت، روزگار سمیت دیگر مسائل حل نہیں کئے گئے جس کی وجہ سے اپیکا میں شامل تمام محکمہ جات کے ملازمین کے متفقہ فیصلے کے مطابق الگ صوبہ کا قیام اور ملازمین کے حقوق کی جدوجہد کو جاری رکھنے کے لئے گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس تشکیل دیاہے جس نے احتجاجی تحریک کا اعلان کردیا ہے اور احتجاجی تحریک کے سلسلے میں ابتدائی مرحلے میں ملتان سپورٹس گراؤنڈ میں 12مارچ کو پہلا کنونشن ہو گا جس میں ملتان سمیت جنو بی پنجاب بھر کے محکمہ جات کے ملازمین اور اساتذہ، پیرا میڈیکل سٹاف، لیڈی ہیلتھ ورکرز، سی بی اے یونینز،ٹریڈ یونینز، سول سوسائٹی سمیت دیگر طبقات شرکت کریں گے تاہم سیاسی و قوم پرست جماعتوں کو ہم کنونشن کے سلسلے میں دعوت نہیں دی ہے ملازمین ہی اب علیحدہ صوبہ کے قیام کے سلسلے میں تحریک کو آگے بڑھائیں گے اور وقت آنے پر ہمیں اسلام آباد، لاہور تک بھی لانگ مارچ کرنا پڑا تو گریز نہیں کریں گے انہوں نے مزید کہا کہ جنوبی پنجاب کے تمام ملازمین بڑھتی ہوئی محرومیوں، مہنگائی اور یوٹیلیٹی بلز میں آئے روز اضافے کی وجہ سے متحد ہو چکے ہیں اور مطالبات کے حق میں پرعزم ہیں اب ہم اپنے گھروں میں بیٹھ کر خودکشی کرنے کی بجائے جدوجہد کرتے ہو ئے شہادتوں کو قبول کریں گے اور اس وقت تک جدوجہد کریں گے جب تک الگ صوبے کا قیام عمل میں نہیں لایا جاتا ہے۔

اعلان

مزید : ملتان صفحہ آخر