سرائیکی ثقافت محبت اور امن کی علامت‘ غلام فرید کوریجہ

  سرائیکی ثقافت محبت اور امن کی علامت‘ غلام فرید کوریجہ

  



ملتان (سپیشل رپورٹر) سرائیکی ثقافت کے دن کو بھرپور طریقے سے منائیں گے ان خیالات کا اظہار سرائیکستان صوبہ محاذ کے چیئرمین خواجہ غلام فرید کوریجہ شریک چیئرمین ظہور دھریجہ، رانا ذیشان نون اور ناصر خان نے پاکستان دفتر میں اظہار خیال کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ سرائیکی ثقافت محبت اور امن کی علامت ہے سرائیکی ثقافت اور سرائیکی اجرک کے (بقیہ نمبر39صفحہ12پر)

ذریعے ہم پوری دنیا کو امن اور محبت کا پیغام دے رہے ہیں انہوں نے کہا سرائیکی کلچر ڈے کے موقعہ پر ہم نے تین روزہ تقریبات کا اعلان کیا ہے 4مارچ کو جھوک سرائیکی ملتان میں مشاعرہ 5مارچ کو اسی جگہ پر محفل موسیقی کا پروگرام ترتیب دیا گیا ہے جبکہ 6مارچ کو صبح 10بجے گھنٹہ ملتان تا پریس کلب سرائیکی اجرک امن ریلی نکالی جائے گی۔ بعد نماز جمعہ سرائیکستان قومی اتحاد کے سیکرٹریٹ خان رینٹ اے کار ڈیرہ اڈہ ملتان پر ثقافتی تقریبات منعقد ہونگی۔ سرائیکی رہنماؤں نے کہا سرائیکی وسیب کے لوگ اسی طرح کی شناخت چاہتے ہیں جیسا کہ دیگر خطوں اور قوموں کو حاصل ہے اسی طرح وسیب کے لوگو اسی طرح صوبہ مانگتے ہیں جیسے دیگر صوبے ہیں سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ حکومت نے وعدے کے باوجود صوبے کے بارے کوئی پیشرفت نہیں کی۔ سب سول سیکرٹریٹ کا لولی پاپ دیا گیا وہ نقش برآب ثابت ہوا۔ 100دن میں صوبہ بنانے کا تحریری معاہدہ 500سے زائد دنوں تک محیط ہوچکا ہے مگر ابھی تک صوبے ایک کمیٹی نہیں بنائی گئی سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ وسیب کے لوگ مایوسی کا شکار ہیں ہم نئے سرے سے پونم کو زندہ کرنے کے بارے سوچ رہے ہیں انہوں نے کہا کہ سرائیکی وسیب کے محصولات سے سرائیکی کلچر ڈے منایا جائے بلوچی کلچر ڈے وسیب کے وسائل سے منانا غلط ہے ہمار سوا ہے کہ کیا بلوچستان حکومت سرائیکی کلچر ڈے سرکاری خرچ پر منائے گی؟ سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ ہم سرائیکی کلچر ڈے کو اتنا بھرپور طریقہ سے منائیں گے کہ سرکاری تقریبات والے ششدر رہ جائیں گے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر