بچی سمیت 3افراد قتل‘ رحیم یار خان میں حادثہ‘ 1جاں بحق

        بچی سمیت 3افراد قتل‘ رحیم یار خان میں حادثہ‘ 1جاں بحق

  



شجا ع آباد‘ ہارون آباد‘ اوچشریف‘ بہاولنگر‘ رحیم یار خان (نمائندہ خصوصی‘ تحصیل رپورٹر‘ نامہ نگار‘ ڈسٹرکٹ رپورٹر‘ نمائندہ پاکستان‘ بیورو رپورٹ) دوستوں کی دعوت سے واپسی پر24سالہ نوجوان قتل کردیا گیا موضع وینس کا رہائشی 24سالہ نوجوان شاہد دوستوں کی دعوت(بقیہ نمبر43صفحہ12پر)

کھاکر واپس گھر کی طرف جارہاتھا کہ نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے قتل کردیا اور قاتل لاش دریا چناب کے کنارے پر پھینک گئے اہل علاقہ نے پولیس کو اطلاع دی پولیس نے موقع پر پہنچ کر نعش کو قبضے میں لیکر سول ہسپتال پوسٹ مارٹم کے لیے منتقل کردیا ورثا کے مطابق شاہد دوستوں کی دعوت پر گیا تھا واپسی پر نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے قتل کردیا پولیس نے پوسٹ مارٹم کے بعد نعش ورثا کے حوالے کردی اور نامعلوم قاتل کے خلاف کاروائی شروع کردی۔ خاوند نے بیوی کو کسی غیر شخص کیساتھ موبائل پر بات کرنے کے شک پر کلہاڑی کا وار کرکے قتل کر ڈالا، پولیس نے ملزم کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا ہے۔مدعی مقدمہ شہزاد احمد سکنہ صابل سٹاپ شرقپور کے مطابق اسکی ہمشیرہ صفیہ بی بی کی شادی تین سال قبل محمد عنصر سلیم سکنہ چک 84فائیو آر اضافی بستی ہارون آباد کیساتھ ہوئی تھی جن کے ہاں کوئی اولاد پیدا نہ ہوئی کچھ عرصہ سے میری ہمشیرہ صفیہ بی بی اور بہنوئی محمد عنصر سلیم کے مابین ناچاقی کے باعث آئے روز لڑائی جھگڑا رہنے لگا محمد عنصر سلیم میری ہمشیرہ کو مارپیٹ کرتا رہتا، صفیہ بی بی نے مجھیبتایا یکم مارچ 2020؁ ء کو میں سلطان علی سکنہ وارڈ نمبر 10یز مان اور نذیر احمد سکنہ خان بیلہ تحصیل لیاقت پور کے ہمراہ محمد عنصر سلیم بہنوئی کو سمجھانے کیلئے مذکورہ چک آیا، تقریباً پونے چھ بجے شام معہ گواہان بالا محمد عنصر سلیم کے گھر صحن میں پہنچا کمرہ رہائشی کا دروازہ کھلا تھا دیکھا کہ محمد عنصر میری ہمشیرہ صفیہ بی بی کو مار رہا ہے اور صفیہ بی بی نے خود کو چھڑواکر دروازے کی طرف بھاگی تو محمد عنصر سلیم نے پیچھے سے کلہاڑی کا وار کیا جو صفیہ بی بی کے گردن پر لگا جس خون جاری ہوگیا اور وموقع پر ہی جاں بحق ہو گئی۔وجہ عناد یہ ہے کہ محمد عنصر سلیم کو شک تھا کہ میری ہمشیرہ صفیہ بی بی کسی غیر شخص کیساتھ موبائل پر بات چیت کرتی ہے اسی رنجش کی بناء پر اس نے میری ہمشیرہ کو قتل کر ڈالا۔ اطلاع پر تھانہ صدر پولیس ہارون آباد موقع پر پہنچ گئی نعش کو پورسٹمارٹم کیلئے ٹی ایچ کیو ہسپتال ہارون آباد منتقل کردی جبکہ پولیس نے ملزم محمد عنصر سلیم کو گرفتارکرکے مقدمہ قتل درج کرلیا ہے۔ جبکہ اُوچ شریف کے نواحی علاقہ مخدوم پور میں لالچ میں اندھے شخص نے سونے کی بالیوں کے لئے 5 سالہ بچی کو قتل کرکے لاش گنے کے کھیتوں میں پھینک دی۔ اُوچ شریف کے نواح میں 5 سالہ آمنہ نے سونے کی بالیاں پہنی ہوئی تھی، 5سالہ آمنہ غروب آفتاب سے پہلے گھر نکلی اور لاپتہ ہوگئی جس کے لالچ میں راشد نے بچی کو قتل کرکے اس کے کانوں سے بالیاں اتار لیں پولیس کا کہنا ہے کہ شواہد کی روشنی میں ایک ملزم راشد کو گرفتار کرلیا گیا ہے، اس کے قبضے سے بالیاں بھی برآمد ہوگئی ہیں جب کہ ملزم ہی کی نشاندہی پر بچی کی لاش بھی گنے کی فصل سے برآمد کرلی گئی ہے۔ لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا بعد میں لاش ورثا کے حوالے کردی گئی ہے۔ ٹریفک حادثہ میں شدید زخمی ہونیوالا 45سالہ شخص ہسپتال میں دم توڑ گیا‘ راجن پور کا رہائشی 45سالہ محمداکرم جوکہ اپنی موٹرسائیکل پر سوار ہوکر کام کے سلسلہ میں جارہا تھا کہ تیز رفتاری کے باعث سامنے سے آنیوالی کار سے ٹکرا گیا اور شدید زخمی ہوگیا۔ ورثاء نے طبی امداد کیلئے شیخ زاید ہسپتال منتقل کیا جہاں طبی امداد کے باوجود محمداکرم جانبر نہ ہوپایا اور دم توڑ گیا۔ جبکہ مختلف حادثات میں شدید زخمی ہونیوالے 49افراد جن میں دستگیر کالونی کا رہائشی 5سالہ محمدحمزہ‘ چک 50 پی کی اکبری بی بی‘ گھوٹکی کی 60سالہ شہناز مائی‘ 55سالہ عبدالحق‘ سکھر کا 18سالہ راجہ‘ مومبارک کا 20سالہ غلام عباس‘ کوٹ مٹھن کا 20سالہ منظور احمد‘ کنڈے والی کا 35سالہ عبدالستار‘ صادق آباد کا 18سالہ محمدساجد اور تھلی چوک کا رہائشی 35سالہ یوسف علی وغیرہ کو ہسپتال میں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر