طیب اردگان ہسپتال کو کرونا وائرس کے مریضوں کیلئے مختص کرنیکی تیاریاں

طیب اردگان ہسپتال کو کرونا وائرس کے مریضوں کیلئے مختص کرنیکی تیاریاں

  



مظفرگڑھ‘جتوئی(بیورو رپورٹ‘ تحصیل رپورٹر‘نامہ نگار ) ضلع کے واحد جدید ترین ہسپتال کو پورے جنوبی پنجاب کے کرونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کے لیے مختص کرنے کی تیاریاں عروج پر پہنچ گئیں،رجب طیب اردگان ہسپتال میں انتہائی غریب مریضوں کے لیے(بقیہ نمبر44صفحہ7پر)

بنائے گئے آئی سی یو کو کرونا وائرس کے مریضوں کے لیے مختص کرنے سے غریب مریضوں کے لیے علاج معالجہ کی سہولیات محدود ہوگئیں،عملے کی تربیت کا سلسلہ بھی شروع ہوگیا ہے تفصیلات کیمطابق رجب طیب اردگان ہسپتال میں انتہائی تشویشناک حالت میں لائے گئے غریب ترین مریضوں کے لیے 24 بیڈز کا آئی سی یو موجود تھا،حالیہ حکومتی احکامات کے بعد 14 بیڈز پر مشتمل آئی سی یو کا ایک مکمل وارڈ اب جنوبی پنجاب کے کرونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کے لیے مختص کردیا گیا ہے اور خدانخواستہ کرونا وائرس کے متاثرین کی تعداد بڑھنے کی صورت میں ہسپتال میں مزید بیڈز اور وارڈز مختص کرنے اور اس حوالے سے فوری انتظامات کی تیاریوں کے حوالے سے بھی رجب طیب اردگان ہسپتال کی انتظامیہ کو سخت ہدایات جاری کی گئی ہیں.ہسپتال کے آئی سی یو کے آدھے سے زائد بیڈز کرونا وائرس کے مریضوں کے لیے مختص کرنے کے باعث اب انتہائی تشویشناک حالت میں لائے جانے والے بیشتر غریب مریضوں کو اب مفت علاج معالجہ کی انتہائی نگہداشت یونٹ کی سہولیات مفت میسر نہیں ہوسکیں گی اور انھیں علاج معالجے کے لیے ملتان اور دیگر اضلاع کے ہسپتالوں میں دھکے کھانے پڑیں گے.ہسپتال ذرائع کیمطابق کرونا وائرس کے مریضوں کے علاج معالجے کے حوالے سے رجب طیب اردگان ہسپتال کے ڈاکٹروں اور طبی عملے کی ٹریننگ کا عمل بھی شروع ہوچکا ہے اور اگلے ہفتے تک ہسپتال کو کرونا وائرس کے مریضوں کے لیے فعال کردیا جائیگا.حکومتی احکامات کے باعث ہسپتال کے ڈاکٹرز اور طبی عملہ بھی پریشانی کا شکار ہے،دوسری جانب ضلع میں غریب مریضوں کو واحد جدید ترین ہسپتال کو کرونا کے لیے مختص کیے جانے کے حکومتی فیصلے کیخلاف وکلاء،تاجر،سول سوسائٹی کے نمائندگان اور عام شہری بھی یک زبان ہوگئے،ان کا کہنا تھا کہ حکومت غریبوں کے حق پر ڈاکہ مارنے کی بجائے کرونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کے علاج معالجے کے لیے کوئی دوسرا انتظام کرے،ان کا کہنا تھا کہ پہلے ہی سرکاری ہسپتالوں میں علاج معالجہ کی مفت سہولیات ختم کردی گئی ہیں،رجب طیب اردگان ہسپتال روزانہ 2 ہزار غریب مریضوں کو مفت او پی ڈی کی سہولیات اور ماہانہ ایک ہزار سے زائد مریضوں کو سرجری کی مفت سہولیات فراہم کررہا تھا،لیکن اس ہسپتال کو بھی غریبوں کی پہنچ سے دور کیا جارہا ہے جو ناقابل قبول اور قابل مذمت ہے

تیاریاں

مزید : ملتان صفحہ آخر