نوازشریف کوبرطانیہ سے بطور مجرم واپس لانے کی تیاریاں، حکومت پاکستان نے بڑا قدم اٹھالیا

نوازشریف کوبرطانیہ سے بطور مجرم واپس لانے کی تیاریاں، حکومت پاکستان نے بڑا ...
نوازشریف کوبرطانیہ سے بطور مجرم واپس لانے کی تیاریاں، حکومت پاکستان نے بڑا قدم اٹھالیا

  



اسلا م آباد(ڈیلی پاکستا ن آن لائن)نوازشریف کو بطور مجرم واپس لانے کی تیاریاں شروع کردی گئیں۔ اس حوالے سے حکومت پاکستان نے پنجاب حکومت کی سفارشات پربرطانوی حکومت سے رابطہ کرلیا ہے۔

نجی ٹی وی اے آروائی کے مطابق نوازشریف کی بطور مجرم وطن واپسی کیلئے پاکستانی دفتر خارجہ نے برطانوی حکومت کو خط لکھ دیاہے۔خط میں لکھا گیا ہے کہ نوازشریف کی ضمانت ختم ہوچکی ہے۔اور اب کیونکہ وہ ضمانت پر نہیں ہیں اس لئے انہیں واپس بھیجا جائے ۔ انہیں علاج کی غرض سے لندن بھیجا گیا تھا مگر علاج بھی نہیں ہوااس لئے انہیں ڈی پورٹ کریں تاکہ وہ اپنی سزا پوری کرسکیں۔

اس سے قبل حکومت برطانیہ نے پہلے پاکستان سے پوچھا تھا کہ نوازشریف لندن میں کیوں موجود ہیں جس پر حکومت پاکستان نے برطانیہ کو واضح کردیاتھاکہ وہ ضمانت پر رہا ہیں اور علاج کیلئے لندن میں موجودہیں۔جیسے ہی ان کاعلاج ہوجائے گا تووہ واپس آجائے گا۔

یاد رہے کہ پاکستان اور برطانیہ میں مجرموں کی حوالگی کا معاہدہ پہلے سے موجود ہے اور اگر حکومت سفارتی سطح پر متحرک ہوتو ان کی واپسی کو یقینی بنایا جاسکتا ہے۔سینئرصحافی صابر شاکر کے مطابق حسن اور حسین نوازکو واپس لانا اس لئے مشکل تھا کیونکہ وہ برطانوی شہری ہیں جبکہ اسحاق ڈار پناہ کی درخواست دے چکے ہیں اس لئے ان کا واپسی تھوڑی مشکل ثابت ہوئی تاہم نوازشریف کی واپسی ان کی نسبتا آسان ہوسکتی ہے۔

واضح رہے کہ نوازشریف کو عدالت نے آٹھ ہفتوں کیلئے علاج کی سہولت دیتے ہوئے لندن کی اجازت دی تھی تاہم مقررہ وقت سے کئی ہفتے زیادہ ہوچکے ہیں ۔

مزید : اہم خبریں /قومی /Breaking News