لاہور قلندرز نے دفاعی چیمپین کو شکست دے کر ٹورنامنٹ کی پہلی فتح حاصل کر لی

لاہور قلندرز نے دفاعی چیمپین کو شکست دے کر ٹورنامنٹ کی پہلی فتح حاصل کر لی
لاہور قلندرز نے دفاعی چیمپین کو شکست دے کر ٹورنامنٹ کی پہلی فتح حاصل کر لی

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے سولہویں میچ میں لاہور قلندرز نے سمت پٹیل اور بین ڈنک کی عمدہ کارکردگی کی بدولت سنسنی خیز مقابلے کے بعد کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو 37 رنز سے شکست دے کر ٹورنامنٹ میں پہلی کامیابی حاصل کر لی ہے۔

تفصیلات کے مطابق قذافی سٹیڈیم لاہور میں کھیلے گئے میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کپتان سرفراز احمد نے ٹاس جیت کر لاہور قلندرز کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی جس نے بین ڈنک اور سمت پٹیل کی چھکوں کی برسات سے بھرپور اننگز کی بدولت کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو جیت کیلئے 210 رنز کا ہدف دیا۔ لاہور قلندرز کی اوپننگ جوڑی کرس لین اور فخر زمان نے جارحانہ کھیل کا آغاز کرتے ہوئے پہلی وکٹ کی شراکت میں 36 رنز جوڑے تاہم اس موقع پر فخر زمان محمد نواز کے گیند پر شاٹ لگانے کی کوشش میں انور علی کے ہاتھوں باﺅنڈری پر کیچ ہو گئے۔

کرس لین نے جارحانہ بلے بازی کا سلسلہ جاری رکھا تاہم پاور پلے ختم ہونے کے بعد وہ محمد حسنین کی گیند پر شاٹ مارنے کی کوشش میں وکٹوں کے پیچھے سرفراز احمد کے ہاتھوں کیچ ہو گئے، انہوں نے 22 گیندوں پر 1 چھکے اور 4 چوکوں کی مدد سے 27 رنز کی اننگز کھیلی۔ لاہور قلندرز کے ان فارم بلے باز محمد حفیظ بھی اہم مقابلے میں ناکامی سے دوچار ہو گئے اور 50 کے مجموعی سکور پر بغیر کوئی سکور بنائے پویلین لوٹ گئے۔

تین وکٹیں گرنے کے بعد بین ڈنک اور سمت پٹیل نے کسی بھی باﺅلر کو خاطر میں نہ لاتے ہوئے انتہائی عمدہ اور جارحانہ بلے بازی کرتے ہوئے کوئٹہ کے باﺅلرز پر خوب لاٹھی چارج کیا اور چوتھی وکٹ کی شراکت میں 155 رنز جوڑ کر مجموعی سکور 205 پر پہنچا کر لاہور قلندرز کی کایا ہی پلٹ دی۔ سمت پٹیل نے 40 گیندوں پر 2 چھکوں اور 9 چوکوں کی مدد سے 71 رنز بنائے جبکہ بین ڈنک نے 43 گیندوں پر 10 چھکوں اور 3 چوکوں کی مدد سے 93 رنز کی شاندار اننگز کھیلی۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی جانب سے نسیم شاہ سب سے مہنگے باﺅلر ثابت ہوئے جنہوں نے 4 اوورز میں 48 رنز دئیے مگر کوئی وکٹ حاصل نہ کر سکے اور بین کٹنگ نے 2 وکٹیں حاصل کیں جبکہ محمد نواز، محمد حسنین، فواد احمد نے ایک ، ایک وکٹ حاصل کی۔

لاہور قلندرز کے 209 رنز کے تعاقب میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی اوپننگ جوڑی شین واٹسن اور جیسن روئے نے اننگز کا آغاز کیا تو دوسرے اوور کی چوتھی گیند کے بعد ہی فلڈ لائٹس خراب ہونے کے باعث میچ روک دیا گیا تاہم لائٹس ٹھیک ہونے کے بعد کھیل دوبارہ شروع ہوا تو جیسن روئے 28 کے مجموعی سکور پر 12 رنز بنا کر سمت پٹیل کے ہاتھوں کلین بولڈ ہو گئے۔

پہلی وکٹ گرنے کے بعد میدان میں آنے والے احسان علی بھی صرف 39 کے مجموعی سکور پر ہی پویلین لوٹ گئے، وہ محض 2 رنز ہی بنا سکے۔ کپتان سرفراز احمد نے جارحانہ کھیل پیش کرنے کی کوشش کی اور 2 چوکے بھی لگائے مگر صرف 9 رنز بنا کر سمت پٹیل کی گیند پر محمد حفیظ کے ہاتھوں کیچ ہو گئے۔ شین واٹسن اس دوران پراعتماد طریقے سے بیٹنگ کرتے رہے اور محسوس ہونے لگا کہ وہ آج بڑی اننگز کھیل سکیں گے مگر 53 کے مجموعی سکور پر وہ دلبر حسین کا شکار بن گئے، انہوں نے 17 گیندوں پر 2 چھکوں اور ایک چوکے کی مدد سے 23 رنز بنائے۔

ابتدائی میچز میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی جانب سے عمدہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرنے والے اعظم خان نے میدان میں آ کر محتاط بیٹنگ کا آغاز کیا اور ایک خوبصورت چھکا لگا کر خطرناک عزائم بھی ظاہر کئے مگر بڑی اننگز کھیلنے میں کامیاب نہ ہو سکے اور 12 رنز بنا کر سلمان ارشاد کی گیند پر فیضان خان کے ہاتھوں کیچ ہو گئے۔ آل راﺅنڈر محمد نواز نے کچھ مزاحمت کا مظاہرہ کیا اور 16 گیندوں پر 4 چوکوں کی مدد سے 24 کی اننگز کھیلی مگر 94 کے مجموعی سکور پر فیضان خان نے انہیں دلبر حسین کے ہاتھوں کیچ کروا کر اپنی ٹیم کو چھٹی کامیابی دلا دی۔

آل راﺅنڈر انور علی بھی خاطر خواہ کارکردگی دکھانے میں کامیاب نہیں ہو سکے اور 5 گیندوں پر 4 رنز بنا کر چلتے بنے۔ بین کٹنگ نے 27 گیندوں پر 5 چھکوں اور 3 چوکوں کی مدد سے 53 رنز کی عمدہ اننگز کھیلی تاہم اپنی ٹیم کو شکست سے بچانے میں ناکام رہے اور 159 کے مجموعی سکور پر سلمان ارشاد کی گیند پر محمد حفیظ کے ہاتھوں کیچ ہو گئے۔ فواد احمد نے 14 رنز بنا کر ہدف کی جانب پیش قدمی کرنے کی کوشش کی مگر 165 کے مجموعی سکور پر سلمان ارشاد کی گیند پر کلین بولڈ ہو گئے۔

لاہور قلندرز کی جانب سے سلمان ارشاد سب سے کامیاب باﺅلر رہے جنہوں نے 4 اوورز میں 30 رنز کے عوض 4 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی جبکہ سمت پٹیل، دلبر حسین اور فیضان خان نے بھی 2,2 وکٹیں حاصل کیں۔

واضح رہے کہ میچ کیلئے لاہور قلندرز کی ٹیم میں 3 تبدیلیاں کی گئی تھیں جس کی قیادت سہیل اختر نے کی جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں کرس لین، فخر زمان، بین ڈنک، محمد حفیظ، محمد فیضان، سمت پٹیل، سیکوگ پرسانا، شاہین آفریدی، سلمان ارشاد اور دلبر حسین شامل تھے۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی قیادت سرفراز احمد نے کی جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں احسان علی، محمد نواز، شین واٹسن، جیسن روئے، نسیم شاہ، بین کٹنگ، محمد اعظم خان، محمد حسنین، فواد احمد اور انور علی شامل تھے۔

مزید : کھیل /PSL /PSL News Update